Naseer Turabi,poet,humsafar,title song,drama,died,heart attack
11 جنوری 2021 (10:36) 2021-01-11

لاہور :’’وہ ہمسفر تھا ٗ مگر اس سے ہمنوائی نہ تھی ‘‘ کے خالق معروف شاعر ٗ دانشور اور محقق نصیر ترابی دل کا دورہ پڑنے سے 75 سال کی عمر میں وفات پاگئے۔

تفصیلات کے مطابق اردو شمار کے ممتاز شاعر اور سقوط ڈھاکہ پر لکھی اپنی معروف غزل ’’وہ ہم سفر تھا ٗ مگر اس سے ہمنوائی نہ تھی ‘‘ کے خالق نصیر ترابی انتقال کرگئے۔ وہ معروف علمی ٗ ادبی گھرانے سے تعلق رکھتے تھے۔ان کی غزلوں کو بہت سے گلوکاروں نے گایا  ۔ان کے والد رشید ترابی بھی ملک کے مشہور ذاکر اور خطیب تھے۔نصیر ترابی نے قومی سطح کے کئی مشاعروں میں نظامت کے فرائض سرانجام دئیے۔ان کا شمار صف اول کے اردو شعرا میں ہوتا ہے۔

انہوں نے کافی عرصے تک اخبارات میں کالم نگاری بھی کی۔ اس کے علاوہ انہوں نے یونیورسٹیز میں تدریس کے فرائض بھی سرانجام دئیے اور اردو زبان کے فروغ کیلئے عملی طور پر جدوجہد کی۔ان کی پہلی کتاب عکس فریادی ٗ دوسری کتاب شعریات کے عنوان سے تھی جس میں شعروں کی بنت کے حوالے سے بات کی گئی۔نصیر ترابی کی نماز جنازہ آج ظہر ین کے بعد امام بارگاہ شہدا کربلا انچولی میں ادا کی جائیگی ۔ان کی تدفین وادی حسین قبرستان میں کی جائیگی۔


ای پیپر