بشکریہ :فیس بک

نواز شریف کی خاموشی کے پیچھے چھپے اصل راز ۔۔۔؟
11 دسمبر 2018 (20:50) 2018-12-11

اسلام آباد:سابق وزیراعظم نواز شریف نے احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر صحافی کے سوال پر کہا کہ ہنسنا کیسا؟ ہم تو کھل کر رو بھی نہ سکے ،منگل کو سابق وزیراعظم نواز شریف نیب ریفرنس کے سلسلے میں اسلام آباد کی احتساب عدالت میں پیش ہوئے۔

پیشی کے بعد احتساب عدالت کے باہر صحافیوں نے انہیں گھیر لیا اور سوال کیا کہ آپ کا ہنسنا بہت کم ہوگیا ہے اور آپ کھل کر بات بھی نہیں کرتے۔جس پر نواز شریف نے صحافی کو جواب دیا، 'ہنسنا کیسا؟ ہم تو کھل کر رو بھی نا سکے'۔, نواز شریف کی باتوں سے بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ وہ ابھی اپنی بیگم کلثوم نواز کے دکھ میں مبتلا ہیں اور یہ صدمہ شریف خاندان کیلئے ایک بہت بڑا دھچکا تھا ، کلثوم نواز کی وفات کے بعد مریم نواز کا بھی کسی قسم کا کوئی سیاسی بیان سامنے نہیں آیا ، بعدازاں گاڑی میں بیٹھتے ہوئے سابق وزیراعظم پلٹے اور صحافیوں کو مخاطب کرکے کہا، میں معافی چاہتا ہوں، مختصر سا جواب دیا ہے، مگر دل سے دیا ہے ۔

واضح رہے کہ ایک وقت تھا جب سابق وزیراعظم نواز شریف نیب ریفرنسز کے سلسلے میں احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے غیر رسمی گفتگو میں کافی معاملات پر کھل کر بات کیا کرتے تھے، لیکن اب معاملہ کچھ مختلف ہے اور نواز شریف کچھ خاموش نظر آتے ہیں، جسے صحافیوں نے بھی محسوس کیا۔


ای پیپر