مریم نواز کی گاڑی پر پتھرائو ہوا: خواجہ آصف
11 اگست 2020 (20:24) 2020-08-11

اسلام آباد:مسلم لیگ(ن) کے رہنما خواجہ آصف نے کہا ہے کہ ریاستی جبر کے کبھی بھی اچھے نتائج نہیں نکلتے،فوٹیج موجود ہے بے دردی کے ساتھ ہمارے ورکرز پر تشدد کیا گیا، مریم نواز کی گاڑی پر پتھرائو ہوا اور ان کی گاڑی کے شیشے ٹوٹ گئے ،نیب دفتر کے باہر پولیس کی بھاری نفری تعینات کی جاتی ہے ،کیا خطرہ ہوتا ہے نیب دفتر یا عملے کو جو اتنی فورس تعینات کی جاتی ہے؟

قومی اسمبلی کے اجلاس میں مسلم لیگ (ن)کے پارلیمانی لیڈر خواجہ محمد آصف نے کہا کہ میں بھی نیب میں پیش ہوتا رہا ہوں ، وہاں پولیس کی بھاری نفری تعینات کی جاتی ہے ،کیا خطرہ ہوتا ہے نیب دفتر یا عملے کو جو اتنی فورس تعینات کی جاتی ہے؟لاہور نیب آفس کے باہر اتنی پولیس کی کیا ضرورت تھی ، اتنی نفری تو سپریم کورٹ کے باہر نہیں ہوتی ، ہم احتساب کے عمل کا سامنا کرنے کو تیار ہیں اور کر رہے ہیں،مگر اسکے ساتھ ساتھ پنجاب حکومت نے جو آج ضبر کی انتہا کر دی ہے،یہ چیز  پاکستان کی سیاست کیلئے خوش آئندہ نہیں یہ پاکستانی سیاست کو بدنام کرنے کی سازش ہے۔یہ چیزیں پاکستانی سیاست کو بدنام کرتی ہیں ، پنجاب حکومت کی کارکردگی آپ کی پارٹی خودداستان بیان کر رہی ہے،اس صورتحال میں اپنی پارٹی اور اپوزیشن کی جانب سے سیاسی کارکنوں پر تشدد کی مذمت کرتے ہیں ، ہمارے کارکنوں کو فوری رہا کیا جائے ۔

خواجہ آصف نے کہا کہ آج مریم نواز کی نیب آفس میں پیشی تھی ،جب بھی اس طرح کا ہائی پروفائل لیڈر کہیں پیش ہوتا ہے تو ورکرز کا ساتھ ہونا فطری  سی بات ہے ، ورکرز پر پولیس فورس استعمال کی گئی، مریم نواز نیب نوٹس کا جواب دینے کیلئے پیش ہوئیں کوئی مذاحمت نہیں کی اور جو بھی جواب   تھا وہ دینے کیلئے نیب آفس گئیں، وہاں جو ہنگامہ ہوا ،پولیس کی جانب سے آنسو گیس کا استعمال کیا گیا ،ریاستی جبر کے کبھی بھی اچھے نتائج نہیں نکلتے۔ ہزاروں لوگ اکٹھے تھے اگر مریم نواز نیب میں پیش ہو جاتیں اور اپنا جواب دے دیتیں تو لوگ پرامن طور پر واپس چلے جاتے،ٹی وی  پر فوٹیج چل رہی ہے، بے دردی کے ساتھ ہمارے ورکرز پر تشدد کیا گیا، مریم نواز کی گاڑی پر پتھرائو ہوا اور ان کی گاڑی کے شیشے ٹوٹ گئے ، پتھرائو کیا گیا۔ 


ای پیپر