مودی نے اقوام متحدہ کی اپیل کو بھی ہوا میں اڑا دیا ،ایل اوسی پر بلا اشتعال فائرنگ
11 اپریل 2020 (19:19) 2020-04-11

راولپنڈی : بھارتی فورسز نے ایک بار پھر ایل او سی پر سیز فائر کی خلاف ورزی کر تے ہوئے شہری آبادی کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں اٹھارہ سالہ لڑکی سمیت چھ شہری زخمی ہوگئے ،پاک فوج کی جانب سے موثر جوابی کارر وائی کے نتیجے میں دشمن کی توپیں خاموش ہوگئیں جبکہ لاک ڈائون پر مودی سرکار کی ناقص حکمت عملی کے باعث کورونا سے نمٹنے میں ناکام بھارت اندرونی تنقید سے توجہ ہٹانے کیلئے پاکستان کے خلاف بے بنیاد پروپیگنڈہ میں مصروف ہوگیا, اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کی جنگ بندی کی اپیل کو بھی ہوا میں اڑا دیا۔

ہفتہ کو ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار کے مطابق بھارتی فوج کی جانب سے ایل او سی کے نکیال سیکٹر پر شہری آبادیوں پر بلااشتعال فائرنگ کی گئی،موہڑہ ویلج پر بھارتی فوج کی فائرنگ کے نتیجے میں 18سالہ لڑکی سمیت دو مقامی افراد شدید زخمی ہوئے جبکہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں بھارتی بلااشتعال فائرنگ سے 6 شہری زخمی ہوئے ہیں جنہیں طبی امداد کے لئے مقامی ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے ، پاک فوج کی جانب سے بھارتی فائرنگ کا منہ توڑ جواب دیا گیا جس کے بعد بھارتی توپیں خاموش ہوگئیں دوسری جانب جنگی جنون میں مبتلا بھارت نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کی جنگ بندی کی ہدایات بھی ہوا میں اڑا دیں.

یو این سیکریٹری جنرل نے گزشتہ روز براہ راست بھارتی خلاف ورزیوں کا اپنے ٹوئٹ میں حوالہ دیا تھا اور شہریوں کو جان بوجھ کر نشانہ بنانے پر بھی بات کی تھی، بھارت مسلسل ایل او سی پر خواتین اور بچوں کو کلسٹر بموں کے ساتھ نشانہ بنا رہا ہے، مودی کے برسر اقتدار آنے کے بعد 5 سالوں میں سیز فائر کی خلاف ورزیوں میں تیزی سے اضافہ ہواہے،2016 میں بھارت نے 382 بار سیز فایر معاہدے کی خلاف ورزی کی جبکہ 2017ء میں بھارت نے 1881 بار جنگ بندی کی خلاف ورزیاں کیں،2018ء میں بھارت نے 3038 بار جنگ بندی کی خلاف ورزیاں کیں جبکہ 2019ء میں بھارت نے 3351 بار جنگ بندی کی خلاف ورزیاں کیں، 2020 میں اب تک بھارت 708 مرتبہ سیز فایر معاہدے کی خلاف ورزی کرچکا ہے۔

ماہرین کے مطابق ایسا لگتا ہے کہ بھارت لاک ڈائون پر ناقص حکمت عملی کی بناء پر اندرونی تنقید سے توجہ ہٹانا چاہتا ہے۔واضح رہے کہ بھارت میں کورونا وباء کے کیسز میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے، بھارت میں 7600 کیسز اور 249 اموات سامنے آچکی ہیں، بھارت میں ناقص حکمت عملی کے نتیجے میں سڑکوں پر اموات ہوئیں، بھارت ایک بار پھر 27 فروری کی نام نہاد سرجکل اسٹرائیک کی طرح میڈیا پر گمراہ کن مہم چلا کر دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونک رہا ہے


ای پیپر