الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے پیش نظر سرکاری اداروں میں بھرتیوں پر پابندی عائد کردی
11 اپریل 2018 (17:43) 2018-04-11

اسلام آبا د : الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے پیش نظر سرکاری اداروں میں بھرتیوں پر پابندی عائد کردی جب کہ یکم اپریل کے بعد منظور ہونے والی ترقیاتی اسکیموں پر عملدرآمد بھی روکنے کا حکم دیاہے، تاہم فیڈرل پبلک سروس کمیشن اور صوبائی پبلک سروس کمیشنز کے تحت جاری بھرتیاں اس پابندی کی زد میں نہیں آئیں گی۔بدھ کو ترجمان الیکشن کمیشن کے مطابق الیکشن کمیشن آف پاکستان نے آئندہ عام انتخابات کو شفاف اور آزادانہ بنانے کے حوالے سے حکم نامہ جاری کیا ہے جس کے تحت تمام وفاقی ، صوبائی اور مقامی حکومتوں کے اداروں میں یکم اپریل 2018 سے بھرتی پر مکمل پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

تاہم فیڈرل پبلک سروس کمیشن اور صوبائی پبلک سروس کمیشنز کے تحت جاری بھرتیاں اس پابندی کی زد میں نہیں آئیں گی مزید برآں یہ حکم نامہ بھی جاری کیا گیا ہے ایسے ترقیاتی منصوبے جن کی منظوری یکم اپریل2018ء یا اس کے بعد ہوئی ہے مثلا گیس پائپ لائنز کی تنصیب، سڑکوں کی کارپٹنگ، واٹر سپلائی سکیمز وغیرہ اس قسم کی تمام ترقیاتی سکیموں پر عملدرآمد روک دیا جائے گا اور پہلے سے جاری ترقیاتی منصوبوں کے فنڈز کسی دوسری مد میں منتقل نہیں کئے جائیں گے۔ اس حوالے سے تمام وزارتوں اور متعلقہ محکموں کو آگاہ کر دیا گیا ہے۔


ای پیپر