مسلم لیگ (ن) کے رہنماءجاوید لطیف کو رہا کر دیا گیا
سورس:   فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر
10 جون 2021 (18:12) 2021-06-10

لاہور: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے ایم این اے جاوید لطیف کو لاہور کی کوٹ لکھپت جیل سے رہا کردیا گیا ہے جن کا کہنا ہے کہ مفاہمت کا وقت گزر چکا، ملک میں جنگل کا قانون نہیں ہو سکتا بلکہ آئین کی بالادستی ضروری ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے رہنماءجاوید لطیف کی گزشتہ روز عدالت نے ضمانت پر رہائی کی منظوری دی تھی۔ لاہور کی سیشن کورٹ نے جاوید لطیف کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے انہیں رہائی کیلئے 2، 2 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کروانے کا کہا تھا۔

رہائی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے جاوید لطیف نے کہا کہ مفاہمت کا وقت گزر چکا ہے، طاقتور اور کمزور میں مفاہمت نہیں ہوتی۔ ان کا کہنا تھا کہ ملک میں جنگل کا قانون نہیں ہو سکا بلکہ آئین کی بالادستی ضروری ہے۔ 

واضح رہے کہ جاوید لطیف کے خلاف ریاست مخالف بیان دینے کا مقدمہ ٹاؤن شپ پولیس سٹیشن میں درج ہے جس پر انہیں 27 اپریل کو گرفتار کیا گیا تھا، ان کے مقدمے کی سماعت کل ایڈیشنل سیشن جج حفیظ الرحمان نے کی اور ان کی ضمانت منظور کرتے ہوئے رہائی کیلئے مچلکے جمع کروانے کا حکم دیا۔ 

گزشتہ روز عدالت پیشی سے قبل انہوں نے ماڈل ٹاﺅن کچہری میں میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ مجھے اپنی نہیں بلکہ ملک کی فکر ہے، نظام تباہ ہو چکا ہے، آئے روز ٹرین حادثات ہورہے ہیں اور حکومت کسی بھی چیز کی ذمہ داری قبول کرنے کو تیار ہی نہیں ہے۔ 


ای پیپر