Source : Yahoo

پنجاب حکومت نے نواز شریف کا استقبال روکنے کا فیصلہ کر لیا
10 جولائی 2018 (19:55) 2018-07-10

لاہور: مسلم لیگ (ن) کے قائدنواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز نے 13 جولائی کو وطن واپس آنے کا اعلان کیا ہے۔ پارٹی قائد اور مریم نواز کی وطن واپسی کے پیش نظر مسلم لیگ ن کے کارکنان نے ان کے استقبال کا فیصلہ کیا اور ائیر پورٹ پر کیے جانے والے اس استقبال کے لیے بھرپور تیاریاں بھی شروع کر دی ہیں۔جب کہ دوسری طرف پنجاب حکومت نے سابق وزیراعظم نواز شریف کا استقبال روکنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پنجاب حکومت کی طرف سے ایک بڑا فیصلہ سامنے آیا ہے۔ پنجاب پولیس نے سزا یافتہ سابق وزیراعظم نواز شریف کا ائیرپورٹ پر استقبال روکنے کا فیصلہ کیا ہے۔اور اس متعلق پنجاب پولیس کو ہدایت نامہ بھی جاری کر دیا ہے۔کہ کسی بھی صورت نواز شریف کا استقبال نہ ہونے دیا جائے۔۔یاد رہے کہ مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف اور مریم نواز نے 13 جولائی کو وطن واپس آنے کا اعلان کر رکھا ہے۔ ان کی وطن واپسی کے پیش نظر مسلم لیگ ن کے کارکنان نے ائیر پورٹ پر ہی اپنے قائد اور مریم نواز کے شاندار استقبال کا فیصلہ کیا جس کے لیے زوروشور سے تیاریاں کی جا رہی ہیں۔

کچھ میڈیا ذارئع نے بتایا کہ لیگی کارکنان نے نواز شریف اور مریم نواز کی گرفتاری پر تصادم کا منصوبہ بھی بنا رکھا ہے۔البتہ کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کے لیے نیب نے سکیورٹی کو موثر بنانے کی حکمت عملی بھی ترتیب دے دی ہے۔تاہم کچھ میڈیا رپورٹس میں یہ بتایا گیا ہے کہ پنجاب حکومت نے نواز شریف کا استقبال روکنے کا فیصلہ کیا ہے اور پنجاب پولیس کو حکم دیا ہے کہ کسی بھی صورت نواز شریف کا استقبال نہ ہونے دیا جائے۔خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ اگر نواز شریف کی پاکستان آمد پر زیادہ لوگ جمع ہو گئے تو کوئی نا خوشگوار واقعہ پیش آ سکتا ہے۔


ای پیپر