Image Source : Facebook

پی ٹی آئی نے زرداری کا کیس سپریم کورٹ میں چلانے کا فیصلہ کر لیا
10 جنوری 2019 (18:25) 2019-01-10

کراچی:رکن سندھ اسمبلی اور تحریک انصاف کے رہنما خرم شیر زمان نے الیکشن کمیشن میں دائر سابق صدر آصف علی زرداری کے خلاف نااہلی کی درخواست واپس لے لی۔

جمعرات کو الیکشن کمیشن میں ممبر سندھ عبدالغفار کی سربراہی میں 4 رکنی بینچ نے آصف علی زردرای کی نااہلی سے متعلق درخواست پر سماعت کی۔سماعت کے دوران درخواست گزار خرم شیر زمان بھی الیکشن کمیشن کے دفتر پہنچے اور بینچ سے استدعا کی کہ وہ سابق صدر کے خلاف نااہلی کیس کی درخواست واپس لینا چاہتے ہیں اور اس معاملے کو سپریم کورٹ میں لے جانا چاہتے ہیں۔اس دوران ممبر سندھ الیکشن کمیشن عبدالغفار نے خرم شیر زمان سے مطالبہ کیا کہ وہ درخواست واپس لینے سے متعلق تحریری طور پر بینچ کو آگاہ کریں۔

خرم شیر زمان نے سیکریٹری الیکشن کمیشن کے نام پر ایک درخواست تحریر کی ‘جس میں انہوں نے سابق صدر کےخلاف درخواست واپس لینے سے متعلق تحریر کرتے ہوئے لکھا کہ ہمیں ایسے شواہد مل گئے ہیں جو صرف اعلیٰ فورم پر پیش کریں گے۔بعدازاں الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے خرم شیر زمان نے کہا کہ ہم نے سابق صدر کے خلاف کیس کو بڑے فورم پر لے جانے کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ آصف علی زرداری کے خلاف مزید ثبوت ملے ہیں‘ تاہم ان کے خلاف کیس سپریم کورٹ میں دائر کیا جائےگا۔خرم شیر زمان نے آصف علی زرداری کے کیس کو پاناما پیپرز کیس سے مشابہت دیتے ہوئے کہا کہ یہ پاکستان کا دوسرا بڑا اسکینڈل ہے۔ پی ٹی آئی کے رکن اسمبلی کا کہنا تھا کہ ان کی جماعت کو الیکشن میں پاکستان سے کرپشن کے خاتمے کا ہی مینڈیٹ ملا ہے۔انہوں نے اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ ہم نے سابق صدر آصف علی زرداری کے خلاف کیس کی تیاری مکمل کرلی ہے جبکہ تمام شواہد کی بھی تصدیق کروالی گئی ہے۔خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ مفاہمت کی سیاست تحریک انصاف کےساتھ کوئی نہیں کر سکتا۔


ای پیپر