Israeli,scientist,aliens,arrived,world,trump
10 دسمبر 2020 (19:16) 2020-12-10

تل ابیب :اسرائیلی ادارے کے سربراہ اور سائنسدان کے اعلان نے دنیا کو حیرت میں مبتلا کر دیا ہے جب انہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ دنیا میں خلائی مخلوق آچکی ہے اور وہ امریکی صدر ٹرمپ کو اس کی موجودگی سے بہت پہلے آگاہ کرچکے ہیں مگر ہم نے انہیں روک د یا کہ ابھی ایسا نہ کریں۔

اسرائیلی سپیس سکیورٹی ڈائریکٹوریٹ کے سابق سربراہ ڈاکٹر حائم اشاد نے اپنے ایک تہلکہ خیز انٹرویو میں انکشافات کر کے پوری دنیا کو ورطہ حیرت میں مبتلا کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکی اور اسرائیلی ادارے کئی سالوں سے خلائی مخلوق سے رابطہ کرنے میں کامیاب ہو چکے ہیں اور کئی منصوبوں پر کام کر آغاز بھی ہو چکا ہے جن میں خلائی مخلوق کے تعاون سے مریخ پر ایک خفیہ اڈے کا قیام بھی شامل ہیں۔وہ اس بارے میں امریکی صدر کو پہلے ہی آگاہ کر چکے ہیں اور ٹرمپ پوری دنیا کو اس بارے میں بتانا چاہیے تھے مگر ہم نے انہیں ایسا کرنے سے روک دیا تاکہ دنیا بھر میں ہیجان کی کیفیت نہ پیدا ہو جائے۔

ڈاکٹر حائم نے کہا کہ خلائی مخلوق اب تک اس لئے خاموش تھی کیونکہ وہ اس انتظار میں تھی کہ انسان پہلے اس قابل ہو جائے کہ کائنات اور خلائی جہازوں کے بارے میں مزید سمجھ سکے۔مجھے خلائی مخلوق نے بھی منع کیا تھا کہ ابھی یہ بات کسی کو نہ بتائیں کیونکہ انسانیت اس کیلئے ابھی خود کو تیار نہیں کر پائے گی۔خلائی مخلوق بھی کائنات کے رازوں کو سمجھنے کیلئے اتنی ہی بے قرار ہے جتنا کہ انسان ۔

انہوں نے مزید انکشافات کئے کہ خلائی مخلوق اور امریکہ کے درمیان کئی باہمی معاہدوں پر دستخط ہو چکے ہیں جس کے تحت ہم ان کی مدد سے مریخ میں خفیہ زیر زمین اڈہ بھی بنائیں گے جہاں اور امریکی اور خلائی مخلوق مل کر کام کریں گے۔


ای پیپر