United Nations,concern,pandemic vaccine,access,poor
10 دسمبر 2020 (18:11) 2020-12-10

نیو یارک :اقوام متحدہ نے اس بات کا خدشہ ظاہر کیا ہے کہ عالمی وبا کی ویکسین غریب ممالک تک پہنچنے میں رکاوٹیں پیدا ہو سکتی ہیں ۔ پوری  دنیا میں بڑھتی ہوئی قوم پرستی کی وجہ سے امیر ممالک عالمی وبا سے پہلے چھٹکارا پا سکتے ہیں لیکن عالمی وبا کی ویکسین کسی ایک ملک کیلئے نہیں اور اس کی پوری دنیا میں منصفانہ تقسیم ہونی چاہیے۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتیرس نے ایک انٹرویو میں کہا کہ قوم پرستی پوری دنیا میں بڑی تیزی سے عروچ حاصل کر رہی ہے  اور یہ لگ رہا ہے کہ عالمی وبا کی ویکسین پہلے امیر ممالک میں استعمال کی جا سکتی ہے لیکن ایسا نہیں ہونا چاہیے ۔ ویکسین کی پوری دنیا میں یکساں فراہمی کو یقینی بنایا جانا  چاہیے یہ کسی خاص ملک نہیں بلکہ اقوام متحدہ کی بھلائی کیلئےبنائی گئی ہے۔ سب سے پہلے عالمی وبا کی ان غریب افریقی ممالک میں ضرورت ہے جہاں پر غربت بہت زیادہ ہے۔

انتونیو نے ڈبلیو ایچ او سے اس موقع پر اپیل کی کہ اگلے دو ماہ کے اندر عالمی وبا کی پوری دنیا میں یکساں فراہمی کیلئے 4.5 ملین ڈالر فراہم کئے جائیں تاکہ غریبوں تک بھی عالمی وبا کی ویکسین پہنچ سکے۔اس سلسلہ میں ویکسین معاہدہ ’’کوویسک‘‘ پر عمل کیا جائے جس کے دنیا بھر کے 92 ترقی پذیر ممالک کو 70 کروڑ ویکسینز کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے۔

سیکرٹری جنرل نے کہا کہ عالمی وبا کی ویکسین سے امید ہے کہ وبائی بیماریوں پر قابو پانے میں مددگار ثابت ہو گی اور اس کے ساتھ ساتھ یہ تمام لوگوں تک رسائی بھی حاصل کر پائے گی۔ 


ای پیپر