file photo

احتساب عدالت نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو اشتہاری قرار دیدیا
09 ستمبر 2020 (12:46) 2020-09-09

اسلام آباد: احتساب عدالت نے توشہ خانہ ریفرنس میں سابق صدر آصف علی زرداری اور یوسف رضا گیلانی پر فرد جرم عائد کر دی ہے۔ اسلام آباد کی احتساب عدالت نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو اشتہاری قرار دیدیا۔

احتساب عدالت کے جج اعظم خان نے توشہ خان ریفرنس کی سماعت کی۔ سابق صدر آصف علی زرداری نے عدالت میں صحت جرم سے انکار کیا۔ جج احتساب عدالت نے استفسار کیا کہ کیا ملزمان صحت جرم سے انکار کر رہے ہیں؟ وکیل صفائی نے کہا کہ وزیراعظم کے پاس اختیار ہوتا ہے کہ سمری کی منظوری دے۔ نیب نے اختیارات کا غیر قانونی استعمال کرکے غلط ریفرنس بنایا۔

سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے عدالت میں موقف اپنایا کہ میں نے کبھی رولز کے خلاف کوئی کام نہیں کیا، قانون کے مطابق جو سمری آئی اسے منظور کیا۔

جج اعظم خان نے ریمارکس دیے کہ ہم کیس کے میرٹ پر بات نہیں کر رہے کہ سمری کیسے آئی اور منظور ہوئی۔ عدالت نے نواز شریف کی منقولہ اور غیر منقولہ جائیداد کی تفصیل7 دن میں طلب کرلی ہیں۔

عدالت نے ریمارکس دیئے کہ آئندہ سماعت پر نواز شریف کی عدم پیشی کی صورت میں جائیداد منجمد کر لی جائے گی۔ احتساب عدالت اسلام آباد میں توشہ خانہ ریفرنس کیس کی سماعت 24 ستمبر تک ملتوی۔


ای پیپر