09 اکتوبر 2020 (22:45) 2020-10-09

لاہور : وفاقی اور صوبائی حکومت نے احتجاجی جلسوں کے دوران مریم نواز کو گرفتار نہ کرنے کا عندیہ دے دیا، وزیراعلیٰ پنجاب اور وفاقی وزراء نے اتفاق کیا گیا کہ اپوزیشن کو احتجاج کیلئے فری ہینڈ دیا جائے، کسی غیرجمہوری اقدام بجائے حکومتی بیانیئے سے اپوزیشن کو بےنقاب کیا جائےگا ۔

عثمان بزدار سے پارٹی رہنمائوں کی اہم میٹنگ میں اس بات کا فیصلہ کیا گیا کہ اپوزیشن کو جلسے جلوسوں کیلئے فری ہینڈ دیا جائے گا لیکن دوسری طرف عمران خان اپنے ایک بیان میں واضح کیا کہ اپوزیشن جو کچھ مرضی کر لے اب این آر او نہیں ملے گا کیونکہ اگر اب ان لوگوں کو این آر او دے دیا گیا تو پاکستان تباہ ہو جائیگا ،عمران خان کا کہنا تھا کہ اگر جلسے جلوسوں میں کسی نے بھی قانون کی خلاف ورزی کی تو انہیں جیلوں میں ڈال دیا جائے اور اس دفعہ یہ لوگ یاد رکھیں انہیں وی آئی پی جیل میں نہیں بلکہ غریب اور عام آدمی والی جیل میں ڈالا جائیگا ۔

 وزیر اعلی عثمان بزدار سے وفاقی وزراء شاہ محمود قریشی، اسد عمر، شفقت محمود، فواد چودھری، چیف وہپ قومی اسمبلی ملک عامر ڈوگر اور شہزاد اکبر نے ملاقات کی،ملاقات میں  اپوزیشن کو احتجاجی سرگرمیوں کیلئے اجازت کے معاملے پر مشاورت کی گئی۔ پنجاب اور وفاقی حکومتی شخصیات نے اپوزیشن کو فری ہینڈ دینے کی تجویزدی ہے،  اتفاق کیا گیا کہ اپوزیشن کے احتجاج سے نمٹنے کیلئے کوئی غیرجمہوری اقدام نہیں اٹھایا جائے گا۔ 


ای پیپر