انتہائی سستی اور کم خرچے والی الیکٹرک موٹرسائیکل
09 اکتوبر 2019 (20:41) 2019-10-09

پاکستان کے شہر ساہیوال میں  مقامی افراد نے مل کر ایسی بائیک بنانے کی تیاری شروع کر دی ہے جو بجلی پر چلائی جا سکے گی ،بڑھتی مہنگائی کیساتھ پٹرول کی قیمتوں میں ہوشر با اضافے کیساتھ لوگوں کا بائیک چلانا مشکل ہوتا جا رہا ہے ،دوسری طرف ڈالر کی اونچی اڑان اور بڑھتے ٹیکسز کی وجہ سے موٹرسائیکل بنانے والی کمپنیوں نے قیمتوں میں بھی اضافہ کر دیا ہے جس کی وجہ سے ایک عام آدمی کی سواری بھی اس کی پہنچ سے دور ہوتی جا رہی ہے ۔

اس صورتحال کو مد نظر رکھتے ہوئے اب پاکستان میں بجلی سے تیار کردہ موٹرسائیکل بنانے پر کام شروع کیا جا چکا ہے ،پچھلے کچھ سالوں میں ، مختلف کمپنیوں نے ملک میں الیکٹرک موٹر بائیکس متعارف کروائیں۔ لیکن وہ مختلف وجوہات کی بناء پر عوام کی توجہ حاصل نہیں کرسکیں اس کی بڑی وجہ ان کی قیمتیں انہتائی زیادہ تھیں ۔

لاہور میں کام کرنے والی الیکٹرک موٹرسائیکل کمپنی کے سی ای او کے مطابق برقی موٹر سائیکل پر کام کر رہے ہیں جو بجٹ کے موافق ہوگی۔ اس موٹر سائیکل کا نام جانوروں کے نام پر رکھا گیا ہے۔ان الیکٹرک موٹر بائیکس کی شکل اور ڈیزائن عام موٹرسائیکلوں کی طرح ہے ، پٹرول کی بجائے ، وہ بجلی کی بیٹریاں چلائی جائینگی۔

الیکٹرک بائک کی حد 70 کلومیٹر تک ہے اور اسے گھر یا دفتر میں پانچ گھنٹے میں چارج کیا جاسکتا ہے۔ موٹرسائیکل کی قیمت فی الحال 88,000 روپے رکھی گئی ہے لیکن جیسا کہ کمپنی کے سی ای او نے دعوی کیا ہے ، وہ قیمت کم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

بائیک بنانے والی کمپنی کا کہنا ہے اگر عام (پیٹرول موٹرسائیکل) 50 کلومیٹر اوسط دے تو ، اس کا ماہانہ اخراجات 4000 روپے کے لگ بھگ ہوں گے لیکن الیکٹرک موٹر سائیکل کی قیمت اس کے مقابلے میں صرف 500 روپے ہوگی۔


ای پیپر