corona, educational institutions, virus, covid-19
کیپشن:   فائل فوٹو
09 May 2021 (07:58) 2021-05-09

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے ملک بھر میں عالمی وبا کورونا وائرس بڑھنے کے خطرات کے پیش نظر تمام تعلیمی اداروں میں تعطیلات 23 مئی تک بڑھانے کا فیصلہ کر لیا ہے، تاہم اس فیصلے پر نظر ثانی 18 مئی کو کی جائے گی۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق اس بات کا فیصلہ ایک اہم اجلاس میں کیا گیا۔

خیال رہے کہ تمام تعلیمی اداروں کو 17 مئی تک بند کیا گیا تھا لیکن اب کورونا وائرس پھیلنے کی وجہ سے تعطیلات کو بڑھا دیا گیا ہے۔

یہ بات بھی ذہن میں رہے کہ پاکستان میں کورونا کے خطرات بڑھتے جا رہے ہیں۔ اس وقت پورے ملک میں لاک ڈاؤن ہے۔ عیدالفطر پر وائرس پھیلنے سے بچاؤ کیلئے حکومت نے شہریوں کو پورا ہفتہ تعطیلات دی ہیں تاکہ وہ گھروں میں رہ کر محفوظ رہ سکیں، اس کے علاوہ تمام امتحانات کو بھی 15 جون تک ملتوی کر دیا گیا ہے۔

حکومت کی جانب سے عوام سے اپیل کی گئی ہے اپنی اور اپنے پیاروں کی حفاظٹ کیلئے عیدالفطر گھروں پر گزاریں، سماجی فاصلہ برقرار رکھیں، ضرورت کے وقت ہی گھروں سے نکلیں اور ماسک کا استعمال لازمی اپنائیں۔

عوام کی حفاظت کے پیش نظر تمام کاروبار کو ٹرانسپورٹ کو بند کر دیا گیا ہے تاہم ضروریات زندگی کے پیش نظر کھانے پینے کی دکانیں، میڈیکل سٹورز اور پیٹرول پمپس کھلے رکھنے کی اجازت ہے۔

صدر مملکت نے اس سلسلے میں عوام کیلئے ایک خصوصی پیغام جاری کیا ہے جس میں انہوں نے اپیل کی ہے کہ وہ ہجوم والی جگہوں پر نہ جائیں، عیدالفطر پر گھومنے پھرنے سے گریز کریں کیونکہ اگر وہ رش والے علاقوں میں گئے تو اس سے وائرس پھیلنے کا شدید خطرہ موجود ہے۔


ای پیپر