Institutions gave a vote of confidence to the Prime Minister, Shahid Khaqan Abbasi
کیپشن:   فائل فوٹو
09 مارچ 2021 (10:43) 2021-03-09

اسلام آباد: مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما شاہد خاقان عباسی نے الزام عائد کیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو اداروں نے اعتماد کا ووٹ لے کر دیا تھا۔

اپنے ایک بیان میں شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کے خود اعتماد کا ووٹ لینے کی آئین اور قانون میں جگہ نہیں ہے۔ ان کو تو کو اداروں نے اعتماد کا ووٹ لے کر دیا۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے اپنی تقریر کے دوران اپوزیشن کو دھمکیاں دیں لیکن سپیکر قومی اسمبلی اسمبلی بالکل خاموش رہے۔ سپیکر صاحب کو ہاؤس چلانے کا علم ہے نہ ہی اخلاقی قدروں کا، دنیا کے پارلیمان کا اصول ہے کہ جو آدمی ایوان میں نہ ہو اس کی بات نہیں کر سکتے۔

ان کا کہنا تھا کہ آئین اور قانون کے راستے پر چلنے تک ملک آگے نہیں بڑھ سکتا۔ قومی اسمبلی یا پنجاب میں عدم اعتماد اقتدار نہیں بلکہ ملک کی خاطر ہوگا۔ ملک میں پارلیمان کا نظام مفلوج ہے۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ وزیراعظم کا اپنا وزیر خزانہ ایم این ایز کے ہاتھوں شکست کھا گیا، عبدالحفیظ شیخ کو اخلاقی طور پر مستعفی ہو جانا چاہیے تھا۔ کل پی ڈی ایم اجلاس میں بات ہوئی کہ کس طرح ملک کو راہ راست پرلایا جائے۔ اس حکومت کی حیثیت کیا ہے، پورا پاکستان جانتا ہے۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ حکومت سینیٹ الیکشن میں ہارس ٹریڈنگ کر چکی ہے۔ بلوچستان 70 کروڑ جبکہ سندھ میں 35 کروڑ دیئے گئے۔ ارکان اسمبلی سے 50، 50 کروڑ فنڈز کا وعدہ رشوت نہیں تو کیا ہے؟


ای پیپر