Broadsheet Commission: Decision to give equal privileges to Justice (retd) Azmat Saeed
کیپشن:   فائل فوٹو
09 مارچ 2021 (08:44) 2021-03-09

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے براڈ شیٹ کمیشن کے سربراہ جسٹس ریٹائرڈ عظمت سعید کو حاضر سروس جج کے برابر مراعات دینے کا فیصلہ کرتے ہوئے سمری منظوری کیلئے کابینہ کو بھجوا دی ہے۔

اس بات کی ہدایات وزیراعظم عمران خان کی جانب سے دی گئی تھیں۔ براڈ شیٹ کمیشن کے سربراہ کو جج کے برابر تنخواہ اور دیگر مراعات دینے کی سمری کابینہ کی منظوری کے بعد لاگو کر دی جائے گی۔

خیال رہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے برڈ شیٹ معاملے کی تحقیقات کرکے اس میں شامل اور فائدہ اٹھانے والے افراد بارے پتا لگائے گی۔ یہ کمیشن پانچ حصوں کی جاچ پڑتال کرے گی جن میں فرمز کا انتخاب، معاہدے کی منسوخی، براڈ شیٹ اور آئی اے آر کے ساتھ تفصیہ، ثالثی اور ادائیگی شامل ہیں۔

خیال رہے کہ براڈ شیٹ معاملے کو پاناما کیس سے بھی بڑا معاملہ قرار دیا جا رہا ہے۔ یہ معاملہ انتہائی حساس نوعیت اختیار کر چکا ہے۔ سابق اور موجود حکومت دونوں ہی ایک دوسرے پر اس معاملے کا الزام عائد کر رہی ہیں۔ اسی لئے وزیراعظم کی جانب سے حقائق کی چھان بین کیلئے جسٹس ریٹائرڈ عظمت سعید کی سربراہی میں کمیشن قائم کر دیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ سابق صدر پرویز مشرف کے دور میں ایک برطانوی فرم براڈ شیٹ کیساتھ معاہدہ کیا گیا تھا کہ اہم پاکستانیوں کے اثاثوں کی انوسٹی گیشن کرکے اسے کی تفصیلات پاکستان کو فراہم کی جائیں۔

تاہم 2003ء میں حکومت کی جانب سے یہ معاہدہ ختم کر دیا گیا تھا۔ برطانوی فرم اس کے بعد واجبات کے حصول کیلئے عدالت میں کیس دائر کر دیا تھا۔ موجودہ حکومت کے دور میں برطانوی عدالت نے پاکستان کیخلاف فیصلہ دیا۔ پاکستان کو جرمانے کیساتھ یہ رقم ادا کرنا پڑی تھی۔

(بشکریہ نیو نیوز)


ای پیپر