پی ایس ایل میں امپائرز کی ناقص کارکردگی پر بھی تنقید
09 مارچ 2018 (16:45)

دبئی : پی ایس ایل میں ایک طرف دلچسپ مقابلے جاری تو دوسری طرف شائقین کرکٹ ناقص امپائرنگ سے سخت مایوس نظر آتے ہیں
تفصیلات کے مطابق پاکستان سپر لیگ کے امپائرنگ پینل میں پاکستان سے تعلق رکھنے والے احمد شہاب، راشد ریاض، آصف یعقوب، خالد محمود، شوزیب رضا اور علیم ڈار شامل ہیں جبکہ انگلینڈ کے ٹم روبنسن اور سری لنکا کے رینمور مارٹینیز شامل ہیں۔سری لکنا کے روشن ماہانامہ اور پاکستان کے محمد انیس میچ ریفری کے فرائض انجام دے رہے ہیں۔


اعداد و شمار کے مطابق احمد شہاب کو صرف 4 ون ڈے انٹرنیشنل اور 8 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز میں امپائرنگ کا تجربہ حاصل ہے، اس کے علاوہ راشد ریاض اور آصف یعقوب پاکستان کے ڈومیسٹک ٹورنامنٹس میں امپائرنگ کے فرائض انجام دیتے رہے ہیں اور انٹرنیشنل کرکٹ میں امپائرنگ کا ان کا کوئی خاص تجربہ نہیں۔خالد محبوب خواتین کے ون ڈے انٹرنیشنل میچز میں امپائرنگ کا تجربہ رکھتے ہیں البتہ وہ زیادہ تر پاکستان کے ڈومیسٹک ٹورنامنٹس میں ہی امپائرنگ کرتے ہیں البتہ شوزیب رضا پاکستان کے ایک تجربہ کار امپائر ہیں جو تقریبا 19 ون ڈے انٹرنیشنل میچز اور 27 کے قریب ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز میں امپائرنگ کے فرائض انجام دے چکے ہیں۔


انگلینڈ سے تعلق رکھنے والے ٹم روبنسن نے اپنا امپائرنگ ڈیبیو 5 جون 2013 کو کیا تھا اور اب تک وہ 13 ون ڈے انٹرنیشنل اور 10 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز میں امپائرنگ کرچکے ہیں۔سری لنکا سے تعلق رکھنے والے رینمور مارٹینیز بھی دیگر امپائرز کے مقابلے میں انٹرنیشنل میچز کا زیادہ تجربہ رکھتے ہیں وہ اب تک 8 ٹیسٹ میچز، 44 ون ڈے اور 22 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز میں امپائرنگ کے فرائض انجام دے چکے ہیں۔ پی ایس ایل کے امپائرنگ پینل میں سب سے زیادہ تجربہ کار امپائر علیم ڈار ہیں جو اب تک 117 ٹیسٹ میچز، 190 ون ڈے اور 42 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز میں امپائرنگ کرچکے ہیں۔


ای پیپر