مسلم لیگ(ن) نے ایمنسٹی سکیم میں زیادہ رقم جمع کی
09 جنوری 2020 (21:27) 2020-01-09

اسلام آباد : قو می اسمبلی کو آ گاہ کیا گیا ہے کہ2019میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کی جانب سے دی گئی ایمنسٹی سکیم سے62ارب جمع ہوا، جبکہ مسلم لیگ ( ن ) کی حکومت کی جانب سے متعارف کرائی گئی ایمنسٹی سکیم سے 123ارب وصول ہوئے ۔

2015سے 2019تک متعارف کرائی گئی4ٹیکس ایمنسٹی اسکیموں کے تحت2لاکھ15ہزار سے زائد لوگوں نے استفادہ کیا، جب تک ملک ان خیالات کا اظہار وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان، پارلیمانی سیکرٹری تجارت عالیہ حمزہ ملک، پارلیمانی سیکرٹری منصوبہ بندی و ترقی کنول شوذب و دیگر نے وقفہ سوالات میں ارکان کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے بتایا کہ سودی نظام سے نہیں نکلے گا معاشی طور پر خوش حال نہیں ہو سکتے، سودی نظام کا خاتمہ فوری طور پر ممکن نہیں بلکہ یہ بتدریج ہو گا، ایم ایل ون سمیت سی پیک منصوبوں کی کل مالیت تقریباً 50ارب ڈالر ہے، جن میں سے 11ارب ڈالر سے 13منصوبے مکمل ہو چکے ہیں جبکہ 18ارب ڈالر کی لاگت سے 13منصوبے زیر تکمیل ہیں۔

ملک کی برآمدات میں 4.6فیصد اضافہ ہوا ہے، تجارتی خسارہ 35فیصد کم ہوا ہے، چین کو چاول کا کوٹہ 52فیصد اضافہ ہوا اورچینی کا کوٹہ 58فیصد اضافہ ہوا ہے، 45فیصد یو اے ای میں برآمدات میں اضافہ ہوا ہے، چین کے ساتھ برآمدات میں اضافہ ہو رہا ہے،ماہی گیروں کی فلاح و بہبود کیلئے ای ڈی ایف کی جانب سے 27کروڑ 40لاکھ روپے گزشتہ 5سال میں خرچ کئے گئے، جولائی تا دسمبر 2020 مہنگائی کی شرح 14.19 فیصد ریکارڈ کی گئی ۔


ای پیپر