نوازشریف کی صحت اب بھی تشویشناک ہے ،ڈاکٹر عدنان
09 دسمبر 2019 (23:53) 2019-12-09

لندن: سابق وزیراعظم نوازشریف کے صاحبزادے حسین نواز نے کہاہے کہ والد کے پلیٹ لیٹس نیب کی حراست کے دوران تیزی سے گرے ،کسی پر کوئی الزام نہیں لگا رہا ، رپورٹ آنے پر ہر بات واضح ہوجائے گی ،پلیٹ لیٹس متوازن ہونے کے بعد ہی نوازشریف کو لاحق مرض کا علاج شروع ہو سکے گا .

نوازشریف کو جیل میںقید تنہا ئی میں رکھا گیا اور انہیں اذیتیں دی جاتی رہیں ، میاں نوازشریف کو کوٹ لکھپت سے نیب آفس کیوں لایا گیا، نیب کی حراست سے قبل ان کے پلیٹ لیٹس75ہزار تھے ایک دم کم کیسے ہوگئے ،حقیقت سب کے سامنے آجائے گی ،ڈاکٹر میاںصاحب کو کچھ دیے جانے کی تحقیق کر رہے ہیں ۔ڈاکٹر عدنان نے کہا کہ نوازشریف کے پلیٹ لیٹس ہفتے میں دو بار چیک کئے جاتے ہیں ،ان کا علاج کب تک چلے گا وقت کا تعین نہیں کیا جا سکتا، نوازشریف کی صحت اب بھی تشویشناک ہے ۔

حسین نواز نے کہا کہ والد کے پلیٹ لیٹس نیب کی حراست کے دوران تیزی سے گرے ،کسی پر کوئی الزام نہیں لگا رہا ، رپورٹ آنے پر ہر بات واضح ہوجائے گی ،پلیٹ لیٹس متوازن ہونے کے بعد ہی نوازشریف کو لاحقمرض کا علاج شروع ہو سکے گا ، نوازشریف کو جیل میںقید تنہا ئی میں رکھا گیا اور انہیں اذیتیں دی جاتی رہیں ، اب پلیٹ لیٹس کو مستحکم رکھنے کےلئے دوائیں دی جا رہی ہیں انہوں نے کہا کہ باپ کے سامنے بیٹی کو گرفتار کیا گیا، بیگم کی وفات کا میاں صاحب پر گہرا اثر ہوا۔

انہوں نے کہا کہ میاں نوازشریف کو کوٹ لکھپت سے نیب آفس کیوں لایا گیا، نیب کی حراست سے قبل ان کے پلیٹ لیٹس75ہزار تھے ایک دم کم کیسے ہوگئے ،حقیقت سب کے سامنے آجائے گی ، نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس جلد آجائیں گی ،عدالت میں جمع کرائیں گے،ڈاکٹر میاںصاحب کو کچھ دیے جانے کی تحقیق کر رہے ہیں ۔ڈاکٹر عدنان نے کہا کہ نواز شریف کی طبی صورتحال کی بڑی وجہ ان سے جیل میں رکھاگیاسلوک بھی ہے،نیب کو کیا مسئلہ تھا کہ جیل میں نوازشریف سے سوالات سے نہیں کرسکتے تھے جو انہیں نیب آفس منتقل کیا گیا ، نوازشریف کے پلیٹ لیٹس 75ہزار سے 2ہزار پر آنا سوالیہ نشان ہے اس حوالے سے جلد میڈیکل رپورٹ آجائےگی جسے عدالت میں جمع کرایا جائے گا۔ ڈاکٹر عدنان نے کہا کہ نوازشریف کے پلیٹ لیٹس ہفتے میں دو بار چیک کئے جاتے ہیں ،ان کا علاج کب تک چلے گا وقت کا تعین نہیں کیا جا سکتا، نوازشریف کی صحت اب بھی تشویشناک ہے ۔


ای پیپر