Sugar scandal: Ghulam Sarwar Khan demanded action against all mill owners
کیپشن:   فائل فوٹو
09 اپریل 2021 (10:54) 2021-04-09

اسلام آباد: وفاقی برائے ہوا بازی غلام سرور خان نے شوگر سکینڈل کیس میں تمام ملزم مالکان کیخلاف کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ صرف جہانگیر ترین کیخلاف ایکشن نہیں ہونا چاہیے۔

ایک نجی ٹیلی وژن کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے تسلیم کیا کہ جہانگیر ترین تحریک انصاف کے اہم رہنما ہیں جنہوں نے پارٹی کیلئے بہت سی خدمات سرانجام دی ہیں۔ انہوں نے تو اپنی جماعت سے انصاف کا ہی مطالبہ کیا ہے۔

غلام سرور خان کا کہنا تھا کہ تاہم یہ بات درست نہیں ہے کہ جہانگیر خان سے کسی قسم کا انتقام لیا جا رہا ہے۔ شوگر سکینڈل میں شریف برادران اور آصف زرداری کا زیادہ کردار ہو سکتا ہے کیونکہ سندھ اور پنجاب میں دونوں گروپوں کی شوگر ملز ہیں۔ عوام سوچنے پر مجبور ہو جاتے ہیں جب ان بااثر لوگوں کیخلاف کوئی کارروائی نہیں ہوتی۔

وفاقی وزیر نے کہا ہے جہانگیر ترین تحریک انصاف کا حصہ تھے، ہیں اور رہیں گے۔ جماعت میں ان سے کسی کو خطرہ نہیں ہے۔ وہ بھی یہی چاہتے ہیں کہ انصاف ہوتا بھی نظر آنا چاہیے۔

خیال رہے کہ ایف آئی اے نے پی ٹی آئی رہنما جہانگیر ترین اور ان کے صاحبزادے علی ترین کے خلاف مقدمات درج کئے ہیں جن میں ان پر مالیاتی فراڈ اور منی لانڈرنگ کا الزام عائد کیا گیا ہے۔

پروگرام کے دوران ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے غلام سرور خان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے اقتدار میں آ کر اب تک بہت کچھ سیکھ لیا ہے، اب ان کی سوچ بدل چکی ہے، اب عوام کو ایک بدلہ ہوا وزیراعظم نظر آئے گا۔ اب ہم اپنی اصلاح اور عوام کو ریلیف دینے کی کوشش کریں گے۔


ای پیپر