PDM meeting, Fazal ur Rehman, Nawaz Sharif, political stance
کیپشن:   Photo by Twitter
08 نومبر 2020 (17:28) 2020-11-08

اسلام آباد: پی ڈی ایم اجلاس سے افتتاحی خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ آل پارٹیز کانفرنس میں ہمارے بہت سے آپشنز موجود تھے، اپنی پارٹی کے افکار و نظریات سے ذرا بلند ہو کر سوچنا ہوگا۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ ہمارے بیانیہ میں یکسوئی ہو۔

مولانا فضل الرحمان نے سوال اٹھائے کہ ہماری تحریک کے نتیجے میں کوئی ردعمل آتا ہے تو کیا ہم نے کوئی حکمت عملی بنا لی ہے ؟ کیا ہمارے کارکن اور عوام تیار ہیں ؟ اجلاس میں نواز شریف اور آصف زرداری ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔

پیپلز پارٹی کے رہنما راجہ پرویز اشرف کا کہنا ہے کہ پی ڈی ایم کے اے پی سی میں اسٹیبلشمنٹ کا نام لینا طے ہوا تھا، اجلاس میں کسی فرد یا ادارے کا نام لینا طے نہیں ہوا تھا۔ نام لینے ہیں تو پھر پہلے پی ڈی ایم کا نیا اجلاس بلا کر طے کرنا ہوگا۔

آفتاب شیرپاؤ نے کہا کہ نواز شریف آج بھی اپنے بیانیہ پر قائم رہے، اجلاس میں بیانیہ کے حوالے سے کوئی تلخ کلامی نہیں ہوئی، پیپلز پارٹی پی ڈی ایم اتحاد سے پیچھے نہیں ہٹی بلکہ سب سے آگے ہے۔ مولانا فضل الرحمان نے نواز شریف کے بیانیہ پر کوئی سوال نہیں اٹھایا۔

پی ڈی ایم اجلاس میں سابق وزیراعظم نواز شریف نے ویڈیو لنک سے خطاب کیا، ذرائع کے مطابق نواز شریف نے بلاول بھٹو زرداری کا نام لئے بغیر سوال کیا کہ اگر جلسوں میں کسی کا غلط نام لے رہا ہوں تو درست نام بتا دیں میں وہ لے لوں گا۔

خیال رہے کہ شاہد خاقان عباسی ، راجہ پرویز اشرف ، محمود خان اچکزئی ، میاں افتخار حسین ، انس نورانی، مولانا عبد الغفور حیدر، اختر مینگل ، آفتاب شیرپاؤ، سمیت اہم رہنما اجلاس میں شریک تھے۔


ای پیپر