Shehbaz Sharif, PML-N President, UK, medical treatment, Rana Sanaullah
08 May 2021 (15:04) 2021-05-08

لاہور : پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثناء اللہ نے کہا کہ شہباز شریف کے واپس نہ آنے کی چہ مگوئیاں مفروضہ ہیں ۔ ایسا نہیں کہ شہباز شریف کو نواز شریف کے کان میں کوئی بات کہنی ہے ، شہباز شریف کو صرف چیک اپ کرانا ہے ۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثناء اللہ نے کہا کہ شہباز شریف کا جیل سے باہر آنا کوئی ڈیل نہیں ، شہباز شریف اور حمزہ جیل کاٹ چکے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ حکومتی معاملات چل نہیں سکتے حکومتی وزراء جو مرضی بیانیہ دیں ۔ حکومت کے اندھے انتقام کے ساتھ اسٹبلشمنٹ اب شاید نہیں چل سکتی ۔

لیگی رہنما نے کہا کہ عمران خان اب ایک ڈرامہ کرنا چاہتا ہے وہ اگلے الیکشن میں ایک نئے جھوٹ اور ایک نئے ڈرامے کے ساتھ آگے آئے گا ۔ انہوں نے کہا کہ حمزہ اور مریم کے سامنے دونوں بھائیوں کی مثالیں ہیں ، دونوں کو الیکشن میں بھرپور طریقے سے پارٹی کو متحرک کرنا چاہئے ۔ پارٹی کو جوڑ کر رکھنے کیلئے مریم اور حمزہ کو کردار ادا کرنا ہو گا ۔

رانا ثناء اللہ نے کہا کہ نواز شریف کی غیر موجودگی میں مریم نواز نے بہترین صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا ۔ مریم نواز نے پارٹی کو متحرک کیا اور ضمنی الیکشن میں پارٹی کو کامیاب کرایا ۔ مریم نواز نے کامیاب جلسے کیے ان میں لیڈر شپ کی بہتری صلاحیتیں موجود ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف الیکشن میں پارٹی کیلئے واپس آئیں گے لیکن ہمارے لیے ان کی صحت پہلی ترجیح ہے ۔

لیگی رہنما نے کہا کہ پی ڈی ایم کے مستقبل کو کوئی خطرہ نہیں ، پیپلز پارٹی کا مفاد ہمارے ساتھ نہیں ہے ۔ پیپلز پارٹی کا الحاق جہانگیر ترین گروپ سے ہو سکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بطور سیاسی کارکن دیکھ رہا ہوں کہ پی ڈی ایم سے منحرف جماعتیں واپس آ جائے گی ۔ استعفوں کی بات ایک طرف کرکے باقی معاملات میں حکومت کے خلاف ایک ہو سکتے ہیں ۔

رانا ثناء اللہ نے کہا کہ عید کے بعد پارٹی ایک بار پھر سے سیاسی سرگرمیاں تیز کرے گی ۔ پنجاب ن لیگ کا تھا اور وہ پنجاب کو واپس لے گی ۔ انہوں نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات کا وقت اب گزر چکا اب جنرل الیکشن ہونگے ۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد حکومت کو بلدیاتی ادارے بحال کرنا پڑیں گے ۔


ای پیپر