Obesity has become an epidemic in Pakistan, exercise is a must for prevention
کیپشن:   فائل فوٹو
08 May 2021 (11:14) 2021-05-08

لاہور: پاکستان میں موٹاپا وبائی صورت اختیار کر گیا ہے۔ طبی ماہرین کے مطابق ملک میں سالانہ 40 لاکھ افراد موٹاپے اور اس سے لاحق ہونے والی بیماریوں کے نتیجے میں ہلاک ہو رہے ہیں۔ غذائی ماہرین کا کہنا ہے کہ فاسٹ فوڈ کی بجائے گھر کا کھانا کھا کر اور ورزش کو معمول بنا کر موٹاپے سے بچا جا سکتا ہے۔

معروف ڈائٹیشن فریحہ جے کا کہنا ہے کہ کیک، پیسٹریاں اور دوسری اشیا جن کو شاید ’جنک‘ کے درجے میں رکھا جائے، انھیں کھا کر بھی موٹاپا کنٹرول کیا جا سکتا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ فاسٹ فوڈ اور بازار کا کھانا موٹاپے کی بڑی وجہ ہیں تاہم ورزش کو معمول بنا کر اس سے بچاؤ ممکن ہے۔ سحر وافطار میں اعتدال کے ساتھ کھانا تندرستی کی ضمانت ہے۔ ذیابیطس اور بلڈ پریشر کے مریضوں کیلئے متوازن غذا ضروری ہے۔

طبی ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ پاکستان میں سالانہ 40 لاکھ افراد موٹاپے اور اس سے لاحق ہونے والی بیماریوں کے نتیجے میں ہلاک ہو رہے ہیں۔

موٹاپے کی وجہ سے لاحق ہونے والی بیماریوں کے سبب پاکستان میں معذور افراد کی تعداد بھی بڑھتی جا رہی ہے اور اوسط عمر بھی پانچ سے دس سال کم ہو رہی ہے۔

ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ ملک بھر میں ذیابیطس کے مرض میں بھی اضافہ دیکھا جا رہا ہے جس کی بنیادی وجہ موٹاپا ہی ہے۔

انہوں نے زور دیا ہے کہ لوگوں کو باہر کے کھانے چھوڑ کر گھر میں تیار غذائیں کھانی چاہیے، علاوہ ازیں ورزش کو اپنا معمول بنایا جائے۔ آج ہم آپ کو کچھ ایسی بتانے والے ہیں کہ جن کی مدد سے آپ ہر پسندیدہ چیز کھاتے ہوئے اپنا وزن کنٹرول میں رکھ سکتے ہیں۔


ای پیپر