سینیٹ انتخابات میں ارکین کو بریف کیس بھیجنے کا الزام غلط ہے ،رحمن ملک
08 مارچ 2018 (16:56)

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سینیٹ الیکشن میں ایم کیو ایم پاکستان کوبد ترین شکست کا سامنا ہے تو دوسری جانب ایم کیو ایم رہنماﺅں پر اپنے ووٹ فروخت کرنے کے بھی شرمناک الزامات عائد کیے جا رہے ہیں۔ پاکستان پیپلز پارٹی سے تعلق رکھنے والے سینیٹر رحمن ملک نے پاک سر زمین پارٹی کے چیئرمین مصطفی کمال کے الزامات پر چیلنج کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس میں کوئی حقیقت نہیں، جس میں مصطفی کمال نے دعوی کیا تھا کہ رحمن ملک بریف کیس کے ذریعے متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم)کے ساتھ معاملات طے کرتے تھے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس سینیٹر رحمن ملک نے کہا کہ ایم کیو ایم، پیپلز پارٹی کی اتحادی جماعت تھی اور ساتھ ہی دعوی کیا کہ معاملات گفت و شنید سے طے ہوا کرتے تھے۔انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کے ساتھ اتحاد اور میری کوششوں کا مقصد کراچی میں امن و امان کی بہتری کے لیے تھے۔ان کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم کے پاس نہ کبھی بریف کیس لے کر گیا تھا اور نہ کبھی بھیجا تھا، انہوں نے کہا کہ مصطفی کمال کے دعوے میں کوئی حقیقت نہیں اور یہ جھوٹ پر مبنی ہے۔سینیٹر رحمن ملک نے مصطفی کمال کو چیلنج کیا کہ ثابت کریں کبھی میں نے ایم کیو ایم کو بریف کیس بھیجا ہو۔پی پی پی کے رہنما کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم کے ساتھ معاملات ہمیشہ اپنی اعلی قیادت کے احکامات و پالیسی پر طے کرتا رہا جبکہ ایم کیو ایم اور اپنے پارٹی کے درمیان کردار ہمیشہ خلوص کے جذبے کے ساتھ ادا کیا۔


ای پیپر