امریکی  صدر جوبائیڈن کی جیت کی توثیق،ٹرمپ کی مدت صدارت خطرے میں پڑگئی
08 جنوری 2021 (09:44) 2021-01-08

واشنگٹن : امریکی  صدر جوبائیڈن کی جیت کی توثیق کردی گئی ،مگر کیپٹل ہل پر حملے کے بعد ٹرمپ  کی مدت صدارت خطرے میں  پڑگئی ہے ۔

امریکی صدر کی برطرفی کا مطالبہ زور پکڑنے لگا۔

تفصیلات کے مطابق ٹرمپ کا صدر کےعہدے پر رہنا امریکا کےلیے خطرناک   ہے،اسپیکر ایوان نمائندگان نینسی پلوسی  نے کہا،،کانگریس ٹرمپ کو ہٹانے کیلئے تیار ہے،کابینہ 25ویں ترمیم کو بحال کرتی ہے توٹرمپ کو فوری ہٹایا جاسکتا ہے۔

ڈیموکریٹک پارٹی کے سینیٹر چک شومر  نے صدر ٹرمپ  کو فوری طور پر عہدہ چھوڑنے کا مشورہ دے دیا۔ نومنتخب امریکی صدر جوبائیڈن کی سکیورٹی حکام پر تنقیدکہتے ہیں۔

کیپٹل ہل پر چڑھائی کرنے والے ٹھگوں سے امتیازی سلوک کیا گیا۔اگراحتجاج کرنے والے سیاہ فام ہوتے تو سلوک مختلف ہوتا۔اُدھرفیس بک نے ٹرمپ کا اکاؤنٹ غیر معینہ مدت تک بلاک کر دیا ،مارک زکربرگ  کا کہنا ہے،اکاؤنٹ جوبائیڈن کے عہدہ سنبھالنے تک معطل رہے گا۔

واضح رہے کہ کیپٹل ہل پر ہونے والے حملے اور ہنگامہ آرائی میں خاتون سمیت  4 افراد ہلاک ہوئے،جبکہ متعدد افراد کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔ہارنے والے ٹرمپ  کے حامی  آپے سے باہر ہوگئے  تھے اور کانگریس کی عمارت  کیپٹل ہل میں گھس گئے   تھے ،اس پرتشدد مظاہرے میں   خاتون سمیت 4افرادہلاک   ہوئے تھے ۔

جبکہ پولیس نے  موقع پر متعدد افراد کو گرفتار کرلیا تھاجس کے بعد21جنوری تک  واشنگٹن میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ۔اسپیکر نینسی پلوسی  نے ٹرمپ کا صدر کے عہدے پر رہنا امریکا کیلئے خطرناک   قرار دیدیا ،  ان کا کہناہے کہ  نائب صدر اور کابینہ  25ویں ترمیم بحال کر دیں ٹرمپ کو فوری ہٹایا جاسکتا ہے۔

امریکہ کےنومنتخب امریکی صدر جوبائیڈن  نے کہاکیپٹل ہل پر چڑھائی کرنے والے ٹھگوں سے امتیازی سلوک کیا گیا، جوبائیڈن 20 جنوری کو صدر کے عہدے کا حلف اٹھائیں گے۔

واشنگٹن میں احتجاج کا دفاع کرنے پر ڈونلڈ ٹرمپ کے تمام سوشل میڈیا اکاؤنٹس بلاک کر دیئے گئے۔


ای پیپر