امریکی صدر کا ایران پر مزید سخت معاشی پابندیاں عائد کرنے کافیصلہ
08 جنوری 2020 (23:05) 2020-01-08

واشنگٹن:امریکہ کے صدر ڈونلڈٹرمپ نے عرا ق میں امریکی فوجی اڈوں پر حملے کے بعد ایران پر مزید سخت معاشی پابندیاں عائد کرنے کافیصلہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران دہشتگردوں کا سرپرست اعلیٰ ہے ، دنیا نے ایران کے تباہ کن رویے کو ایک عرصے تک برداشت کیا،اب وہ دور ختم ہوگیا ہے، امریکی افواج کسی بھی چیزکے لئے تیار ہیں،.

ایران نے معاہدے کے بعد یمن اور افغانستان میں دہشت گردی کو فروغ دیا،دنیا ایران کو یہ پیغام دے گی کی اس کی دہشت گردی اب ےہ قبول نہیں کی جائے گی،میں نیٹو سے کہتا ہوں کہ مشرق وسطی میں مزید متحرک کردار ادا کرے،امریکا ان تمام ممالک کے ساتھ امن چاہتاہے جو امن چاہتے ہیں، حملے میں کوئی امریکی زخمی نہیں ہوا، فوجی اڈوں پر بہت کم نقصان ہوا ۔

بدھ کوعراق میں فوجی اڈوں پر ایران کے حملے کے بعدکی صورتحال پرپریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے امریکہ کے صدر ڈونلڈٹرمپ نے کہا کہ گزشتہ رات کے ایران کے حملے میں کوئی امریکی زخمی نہیں ہوا، فوجی اڈوں پر ایران کے حملے سے بہت کم نقصان ہوا، ایران مہذب دنیا کو خوف زدہ کر تا رہاہے، دنیا نے ایران کے تباہ کن رویے کو ایک عرصے تک برداشت کیا،اب وہ دور ختم ہوگیا ہے، امریکی افواج کسی بھی چیزکے لئے تیار ہیں ، ارلی وارننگ سسٹم نے بہترین کام کیا ۔

صدر ڈونلڈٹرمپ نے کہا کہ میرے حکم پر جنرل سلیمانی کو حملے میں قتل کیا گیا، جنرل سلیمانی ہزاروں امریکیوں کے قتل میں ملوث تھا ، وہ امریکی مفادات پر حملے کی پلاننگ کر رہے تھے، جنرل سلیمانی نے حزب اللہ سمیت دیگر دہشت گردوں کو تربیت دی، اسے بہت پہلے مار دیا جانا چاہیے تھا، امریکہ نے ایران پر مزید سخت معاشی پابندیاں عائد کرنے کافیصلہ کیا ہے ، ایران نے معاہدے کے بعد یمن اور افغانستان میں دہشت گردی کو فروغ دیا،دنیا ایران کو یہ پیغام دے گی کی اس کی دہشت گردی اب قبول نہیں کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ میں نیٹو سے کہتا ہوں کہ مشرق وسطی میں مزید متحرک کردار ادا کرے۔

صدر ڈونلڈٹرمپ نے کہا کہ امریکہ کے پاس دنیا کی طاقتور ترین فوج ہے، بہترین اور طاقتور فوج کا مطلب یہ نہیں کہ ہم اسے استعمال کریں گے، ایران نے حالیہ دنوں میں 2 امریکی ڈرون بھی تباہ کیے ، ایران نے یمن ،لبنان ،افغانستان اور عراق میں تباہی مچائی، ایران اپنی ایٹمی سرگرمیاں روکے ، ایران تشدد پھیلاتا رہا تو خطے میں امن نہیں آسکتا،جب تک میں ہوں ایران کو ایٹمی ہتھیار حاصل کرنے نہیں دوں گا۔

صدر ڈونلڈٹرمپ نے کا کہ ایران پستی کی جانب جا رہا ہے ، داعش ایران کافطری دشمن ہے ،داعش کی تباہی ایران کیلئے فائدہ مند ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایران میں خوشحالی آئے ایران اقوام کے ساتھ ہم آہنگی پیدا کرے،امریکا ایران کے عوام اور قیادت کیلئے وہ مستقبل چاہتاہے جو ان کاحق ہے، ہمیں داعش کی تباہی اور دیگر مشترکہ ترجیحات پر کام کرنا چاہیے،امریکا ان تمام ممالک کے ساتھ امن چاہتاہے جو امن چاہتے ہیں۔واضح رہے کہ ایران نے اپنے جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کا بدلہ لینے کے لیے عراق میں امریکی ایئربیس پر بیلسٹک میزائلوں سے حملہ کیا تھا، ایران کی جانب سے ان حملوں میں 80 افراد کے مارے جانے کا دعوی کیا گیا تھا۔


ای پیپر