وسیم اختر اور فاروق ستار میں سخت جملوں کے تبادلے
08 دسمبر 2018 (17:20) 2018-12-08

کراچی: تجاوزات کے خلاف آپریشن پر میئر کراچی وسیم اختر اور فاروق ستار آمنے سامنے آگئے، فاروق ستار نے کہا وسیم اختر کو کراچی بنانے کا ووٹ ملا تھا، برباد کرنے کا نہیں جبکہ وسیم اختر نے کہا میں نے کراچی کو برباد کیا تو فاروق ستار نے ایم کیو ایم کو تباہ کیا۔

کراچی کی انسداد دہشت گردی عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فاروق ستار نے کہا کہ عدالتی احکامات کے آڑ میں لوگوں کو بیروزگار کیا جارہا ہے، 5 لاکھ افراد متاثر ہوئے ہیں، وسیم اختر کو کراچی بنانے کا ووٹ ملا تھا، برباد کرنے کا نہیں، اب وسیم اختر آکر کراچی سے ووٹ لے کر دکھائیں، کراچی کے لوگ بتائیں گے کس کی کیا اوقات ہے اور کون مظلوم کی آواز ہے۔

انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کے حکم پر ناجائز قبضہ ہٹائیں، 50 سالوں سے قائم مارکیٹوں کو نہ ہٹائیں، تجاوازت پر دکاندار تاجروں سے مل کر پالیسی بنائیں، لوگوں کو بیروزگار کرکے جرائم کو بڑھایا جارہا ہے۔صحافی کے سوال پر کہ کیا آپ کو تحریک انصاف کی جانب سے اگلا میئر بنایا جارہا ہے؟۔ فاروق ستار نے جواب دیا کہ میں منظور وسان کی طرح ایسے خواب نہیں دیکھتا۔

دوسری جانب میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وسیم اختر نے کہا کہ تجاوزات آپریشن سے متعلق فیصلہ سپریم کورٹ کو کرنا ہے، کے ایم سی کی کرائے پر دی گئی دکانیں توڑی گئیں ہیں، تجاوزات کے بعد ملبہ اٹھانے پر کچھ دن مشکلات کا سامنا کرنا پڑیگا۔ فاروق ستار سے متعلق سوال پر وسیم اختر نے کہا کہ میں فاروق ستار کی باتوں کا کیا جواب دوں، مجھے تو یہ بھی نہیں پتا وہ کونسی جماعت میں ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ اگر میں نے کراچی کو برباد کیا تو فاروق ستار نے ایم کیو ایم کو تباہ کیا ہے۔


ای پیپر