قومی اسمبلی کا اجلاس بلانے کےلئے صد مملکت کو سمری ارسال 
کیپشن:   Source : Yahoo
08 اگست 2018 (18:31) 2018-08-08

اسلام آباد:نگران وزیر اطلاعات علی ظفر نے کہا ہے کہ قومی اسمبلی کا اجلاس بلانے کے لیے صدر مملکت کو سمری ارسال کردی گئی ہے،اجلاس12سے14اگست کے دوران بلانے کا کہا گیا ہے ،بعض سیاسی جماعتیں الیکشن میں مبینہ دھاندلی کے بیانات دے رہی ہیں ، عوام نے آئندہ آنیوالی حکومتکو 5 سال کا مینڈیٹ دیا ہے انہیں کام کرنے دینا چاہیے اور آگے کی طرف دیکھنا ہوگا۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نگران وزیر اطلاعات بیرسٹر علی ظفر نے بتایا کہ قومی اسمبلی کا اجلاس بلانے کے لیے سمری ارسال کردی گئی ہے اور اجلاس 12 سے 14 اگست تک بلانے کا کہا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اجلاس میں اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کا انتخاب ہوگا اور پھر قائد ایوان کا انتخاب بھی کیا جائے گا۔نگران وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ آئین کے تحت 15 اگست سے پہلے اجلاس بلانا لازمی ہے لیکن الیکشن کمیشن کے نوٹی فکیشن تک قومی اسمبلی کا اجلاس نہیں بلایا جاسکتا۔

ایک سوال کے جواب میں بیرسٹر علی ظفر نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے مطابق نتائج میں تاخیر سسٹم کا نقص تھا تاہم تحقیقات سے آر ٹی ایس سسٹم کا نقص پتا چلا جائے گا۔ علی ظفر نے کہا کہ سیاسی بیانات آ رہے ہیں کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی ہے، حکومت کا 5 سال کا مینڈیٹ ہے انہیں کام کرنے دینا چاہیے اور آگے کی طرف دیکھنا چاہیئے۔ انہوں نے کہا جہاں قانون کے مطابق گنتی ضروری ہے وہاں ہونی چاہیئے، عمران خان نے بھی دوباری گنتی کرانے کے حوالے سے بیان دیا ہےبیرسٹر علی ظفر نے مزید کہا کہ دوبارہ گنتی کرانے سے الیکشن سے متعلق خدشات ختم ہو جاتے ہیں، لوڈشیڈنگ پر قابو پانے کیلئے کچھ مشکل اور سنجیدہ فیصلے کرنے ہونگے۔


ای پیپر