Rana Sanaullah Big Statement about PDM
08 اپریل 2021 (15:36) 2021-04-08

لاہور :پنجاب حکومت دائیں اور وفاقی حکومت جہانگیر ترین کی بائیں جیب میں ہے ،وہ جب چاہیں حکومت گرا سکتے ہیں ،رانا ثنا اللہ کا کہنا تھا اگر جہانگیرترین نے ہم سے رابطہ کیا تو پارٹی پالیسی کے مطابق فیصلہ کرینگے جو عوام کے مفاد میں ہوگا ۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر رانا ثنا اللہ نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جہانگیرترین کو حکومت گرانے کیلئے جہاز کارُخ کسی کی طرف موڑنا نہیں پڑے گا ،البتہ اگر انہوں نے اس سلسلے میں مسلم لیگ ن سے رابطہ کیا تو پارٹی پالیسی کے مطابق عوام کے مفاد میں بہتر فیصلہ کرینگے ۔رانا ثنا اللہ کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن کی لیڈر شپ کو جیلوں میں بغیر کسی وجہ کے ڈال دیا گیا اس وقت جہانگیر ترین کو ظلم نظر نہیں آیا آج عدالتوں کےسامنے کھڑے ہو کر کہہ رہے ہیں کہ میرے ساتھ ظلم ہو رہا ہے ۔

ڈسکہ الیکشن سے متعلق بات کرتے کرتے ہوئے رانا ثنا اللہ کا کہنا تھا کہ ایک دفعہ پھر مسلم لیگ ن اپنی اتحادی جماعتوں کیساتھ مل کر تحریک انصاف کو ٹف ٹائم دیگی ،حکومت مخالف تحریک کیلئے پی ڈی ایم میں شامل اتحاد ی جماعتیں مل کر آئندہ ہونے والے اجلاس میں ایجنڈا طے کرینگی ۔

واضح رہے گزشتہ روز جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ میری تحریک انصاف سے راہیں جدا نہیں ہوئیں ، میں دوست تھا، مجھے دشمنی کی طرف کیوں دکھیل رہے ہیں؟ جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ مجھ پر ایک نہیں بلکہ دو تین مقدمات درج کئے گئے ہیں۔ ہمارے لئے افسوس کا مقام ہے کہ ہم تحریک انصاف سے ہی انصاف مانگ رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ میری وفاداری کا امتحان لیا جا رہا ہے۔  ایک سال سے مجھ پر یہ شوگر کمیشن چل رہا ہے لیکن اس کے باوجود میری تحریک انصاف سے راہیں جدا نہیں ہوئی ہیں۔ میں پاکستان تحریک انصاف میں شامل ہوں اور  رہوں گا۔

جہانگیر ترین نے کہا کہ انتقامی کارروائی جو بھی کر رہا ہے، وقت آگیا ہے اسے بے نقاب کیا جائے۔میرے  اکاؤنٹ کیوں منجمد کیے گئے؟ اس سے فائدہ کون حاصل کر رہا ہے؟ میرے خلاف ظلم بڑھتا جا رہا ہے۔ ایک سال سے انکوائری چل رہی ہے لیکن میں چپ کر کے بیٹھا ہوں۔


ای پیپر