کیا پاکستان میں کرونا سے بڑا طوفان آنے والا ہے ؟
08 اپریل 2020 (17:18) 2020-04-08

اسلام آباد:جہاں اس وقت پوری دنیا لوگ بیماری سے لڑ رہے ہیں وہیں چیئرمین سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ٹاسک فورس ڈاکٹر عطا الرحمن نے کہا کہ کرونا وائرس سے حالات بہت زیادہ خراب ہیں ، ایک بہت بڑا طوفان آرہا ہے ، ہمیں زیادہ سے زیادہ ٹیسٹ کرنا ہونگے ۔

ان کا کہنا تھا کہ ٹیسٹ کرنا ایک چیلنج ہے ،ہمارے پاس وینٹی لیٹرز بھی نہیں ۔ لاک ڈائون کے باوجود عوام اسے سنجید ہ نہیں لے رہے ، میرا خیال ہے اگلے دو چار ہفتے میں کرونا وائرس بڑی تیزی سے بڑھے گا ، اس کے بعد کوئی صورتحال واضح ہو گی ۔

انہوں نے مزید کہا وزیراعلی سندھ بھی اس بات کی نشاندہی کر چکے ہیں ۔ این ڈی ایم اے کے چیئرمین کو چاہیے کہ فلاحی اداروں میں ٹیسٹنگ مشنیں لگوائیں تاکہ زیادہ سے زیادہ ٹیسٹ کئے جا سکیں ۔ صوبوں کو روزانہ ایک لاکھ کے قریب ٹیسٹ کرنا ہونگے پھر اصل تعداد کا پتہ چلے گا ۔ کرونا ویکسین کو بھول جائیں یہ جلد نہیں بنے گی ۔

پاکستان میں جو وائرس ہے وہ چین سے مختلف ہے ۔ حکومت سلیکٹڈ علاقوں میں لاک ڈائون کرنا چاہیے ۔ یہ وائرس گرمی کے موسم میں ختم نہیں ہو گا ، باتیں بے بنیاد ہیں کوئی خاص فرق نہیں پڑے گا ۔ یہ روشنی کی کرن ہے کہ ہمارے ہاں اموات کم ہو رہی ہیں ۔


ای پیپر