عمران خان کو اب این آر او نہیں ملے گا :مولانا فضل الرحمن
07 نومبر 2019 (23:03) 2019-11-07

اسلام آباد :آزادی مارچ میں پاک فوج زندہ باد کے نعرے لگ گئے جبکہ جمعیت علما اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل نے کہا کہ گلے شکوے اپنائیت کی علامت ہوتی ہے دشمنی کی علامت نہیں ہوتی،9/11کے بعدمذہبی طبقے کی بھیانک تصویردنیاکے سامنے پیش کی گئی،آزادی مارچ میں18سالہ پروپیگنڈے کاخاتمہ کردیاگیاہے،ملک بھرسے پولیس کواسلام آبادبلاکرقومی خزانے کونقصان پہنچایاگیا، سیکیورٹی کے نام پرخرچ کیے گئے پیسے کاکوئی توحساب لے،ہم پوری دنیامیں امن کاپیغام دیناچاہتے ہیں ،کل اگرامن خراب ہوتا ہے توذمہ دارکون ہوگا؟

مولانا فضل الرحمن نے دوٹوک اعلان کر تے ہوئے کہا اب عمران خان کو این آر او نہیں دیں گے، حکومتی ٹیم کے ساتھ بے معنی مذاکرات کی کوئی ضرورت نہیں ، اب آنا تو استعفیٰ لیکر آنا،اداروں سے برادرانہ طور پر کہتا ہوں کہ ان سے حکومت نہیں چلائی جاتی ، ہمارا پلان صرف اے بی سی نہیں ہمارا زیڈ تک پلان ہے ،آئی ایس پی آر کی طرف سے جاری بیان ”پا ک فوج غیر جانب دار ہے “کا خیر مقدم کرتے ہیں ۔

جمعرات کو جمعیت علما ئے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے آزادی مارچ کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ میں ستمبر 2001 کے حملوں کے بعد مغربی دنیا میں مذہبی طبقے سے متعلق منفی تاثر ابھرا لیکن آج آزادی مارچ کے نظم و ضبط کی وجہ سے مغرب میں مذہبی طبقے سے متعلق منفی تاثر ختم ہوا۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کے بیان ”پاک فوج غیر جانبدار ہے“کا خیر مقدم کرتے ہیں جبکہ مولانا کے اس بیا ن کے بعد مارچ کے دوران پاک فوج زندہ باد کے نعرے لگ گئے، ہم قومی اداروں سے کہنا چاہتے ہیں کہ ہمیں اپنی امانت واپس لوٹا دو، ووٹ قوم کی امانت ہے اور اس اجتماع کو حقارت کی نظر سے مت دیکھو بلکہ سنجیدہ لو، یہاں موجود لوگوں کو قوم سمجھو، یہ وہ لوگ ہیں جو آپ کے ساتھ ہوں گے۔


ای پیپر