Imran Khan, Hamza Shahbaz, jail, government, Bilawal Bhutto
07 مارچ 2021 (16:52) 2021-03-07

لاہور: چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے کہا کہ کیا آپ نہیں چاہتے پی ڈی ایم پنجاب کو بچائے اور وسیم اکرم پلس سے جان چھڑائے؟ ہم ساتھ مل کر حملہ بھی کریں گے اور جیتیں گے بھی ، اب انہیں نہیں ، عدم اعتماد کب اور کہاں ہونے کا فیصلہ ہمیں کرنا ہے ۔

ملاقات کے بعد بلاول بھٹو اور حمزہ شہباز نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے تبدیلی سرکار کو خوب تنقید کا نشانہ بنایا ۔ لیگی رہنما نے کہا کہ بلاول بھٹو سے کئی معاملات پر بات چیت ہوئی ہے ، ہم آگے بڑھیں گے اور پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے اہم فیصلے کریں گے ۔

حمزہ شہباز نے کہا کہ 2018 کے الیکشن کے بعد ایم پی ایز کو جہازوں میں بنی گالا لے جایا گیا ، 50 لاکھ گھر اور ایک کروڑ نوکریوں کا نعرہ لگایا گیا ، کہاں ہے وہ سب؟ انہوں نے کہا کہ نواز شریف اور شہباز شریف کیخلاف ایک پائی کی کرپشن ثابت نہیں ہوسکی ۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ پنجاب کے قائد حزب اختلاف کو دو سال جیل میں رکھنا پڑا تاکہ مانگے تانگے کی حکومت چل سکے ، ہم پارلیمنٹ اور سڑکوں پر سیاست کریں گے ۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے اندر کے خوف سے اعتماد کا ووٹ حاصل کیا ، کہا جا رہا ہے وزیراعظم نے جتنے ووٹ حاصل کیے اتنے تو پارلیمنٹ میں لوگ نہیں تھے ۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ کل بھی اتفاق رائے سے فیصلے کرتے تھے آئندہ بھی کریں گے ، ہم نے ثابت کر دیا کہ عوام اور پارلیمنٹ ہمارے ساتھ ہے ، ہمیں سڑکوں پر بھی سیاست کرنی ہے اور پارلیمنٹ بھی خالی نہیں چھوڑ سکتے ۔

انہوں نے کہا کہ چودھری صاحبان ہمارے اتحادی رہے ہیں ، ان کے گھر جا کر ووٹ مانگوں گا ۔


ای پیپر