Source : INP

انتخابات میں تاخیر ،نامزد وزیرا علیٰ پنجاب کے سنسنی خیز انکشافات
07 جون 2018 (18:46) 2018-06-07

اسلام آباد: پنجاب کے نامزد نگران وزیر اعلیٰ احسن عسکری نے نامزدگی سے قبل غیر ملکی میڈیا میں شائع ہونے والے اپنے ایک کالم میں کہا تھا کہ عام انتخابات کسی وجہ سے ملتوی ہو جائیں تو سیاسی جماعتیں اعتراض نہیں کریں گی اور ماضی میں الیکشن کا تاخیر کا شکار ہو چکے ہیں، عرب نیوز میں اپریل میں شائع ہونے والے اپنے کالم میں حسن عسکری نے کہاتھا کہ پاکستانی جمہوریت کا اگلے چار ماہ میں برداشت کا امتحان ہے ۔

جون 2018 میں قومی اسمبلی نے پانچ سالہ مدت پوری کی ۔ گزشتہ دو اسمبلیوں نے بھی اپنی مدت مکمل کی ۔ کچھ لوگ اورگروہ الیکشن سے پہلے سیاستدانوں کی کرپشن اور ریاستی وسائل کے غلط استعمال پر احتساب اورتفتیش مکمل کرنے کی تائید کرتے ہیں جبکہ بڑی سیاسی جماعتوں نے اس با ت کی تائید نہیں کی ۔

شائد ہی کوئی ایسی پارٹی یا سربراہ ہو جو الیکشن میں تاخیر کی تائید کرے ۔ تاہم ایسا لگتاہے کہ بیان کیے گئے مسائل اور خاص طور پر نئی حلقی بندیوں کیلئے دو سے تین ماہ تک تاخیر پر ناراضگی ظاہر نہیں کریں گے ۔الیکشن میں 60 یا 90 دن کی تاخیر کی مثالیں ملتی ہیں ۔ 1988 میں عام انتخابات 90 دن کی مقررہ حد کے بعد منعقد ہوئے ۔2008 میں بے نظیر کے قتل کے بعد الیکشن ایک ماہ کیلئے ملتوی ہو گئے تھے ۔


ای پیپر