ٹرمپ کا القاعدہ رہنما ال ریمی کو ہلاک کرنے کا دعویٰ
07 فروری 2020 (13:28) 2020-02-07

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ امریکہ نے جزیرۃ العرب میں القاعدہ کے رہنما کو مار ڈالا تھا - اس جنگ کے بعد کئی روز قبل عسکریت پسند گروپ نے امریکی بحری اڈے پر بڑے پیمانے پر فائرنگ کی ذمہ داری قبول کی تھی۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے وائٹ ہاؤس کے ایک بیان میں کہا کہ امریکہ نے یمن میں انسداد دہشت گردی آپریشن کیا جس دوران القاعدہ کے رہنما قاسم ال ریمی کو کامیابی کے ساتھ ہلاک کر دیا۔ ٹرمپ نے کہا کہ یہ عسکریت پسند گروہ یمن کی سعودی عرب کی حمایت یافتہ حکومت اور دارالحکومت پر قابض باغیوں کے مابین برسوں کی خانہ جنگی کے انتشار میں پروان چڑھ رہا ہے۔' ریمی نے یمن میں عام شہریوں کے خلاف بلا اشتعال تشدد کا ارتکاب کیا اور امریکی عوام اور افواج کے خلاف متعدد حملے کرنے اور اس کی ترغیب دینے کی کوشش کی۔

یاد رہے کہ دہشت گرد تنظیم نے اتوار کے روز فلوریڈا میں امریکی نیول ایئر اسٹیشن پینساکولا میں ہونے والی فائرنگ کی ذمہ داری قبول کی تھی، جس میں سعودی فضائیہ کے ایک افسر نے تین امریکی ملاح کو ہلاک کیا تھا۔


ای پیپر