امریکی عوام کے خلاف نہیں مگر امریکا برائی کا منبع ہے، سعودی فوجی طالب علم
07 دسمبر 2019 (16:17) 2019-12-07

واشنگٹن :امریکا کے ایک فوجی مرکز پر فائرنگ کر کے چار افراد کو قتل کرنے والے سعودی فوجی نے امریکا کو برائی کا منبع قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ وہ امریکیوں کے خلاف نہیں لیکن جس طرح روزانہ کی بنیاد پر مسلمانوں اور انسانیت کے خلاف ہونے والے جرائم کی مالی امداد کے ساتھ ساتھ اِن کی حمایت و تائید کا سلسلہ امریکا نے جاری رکھا ہوا ہے، وہ قابل نفرت ہے۔

میڈیارپورٹس کے مطابق عسکری تربیت حاصل کرنے والے سعودی شہری کا نام سیکنڈ لیفٹیننٹ محمد شمرانی ہے اور اس نے فائرنگ کرنے سے قبل آن لائن اپنا مختصر بیان بھی جاری کیا تھا۔ اس میں اس نے واضح کیا کہ وہ برائی کے خلاف ہے اور سارا امریکا اس وقت برائی کا منبع بن چکا ہے۔

شمرانی نے مزید تحریر کیا کہ وہ امریکیوں کے خلاف نہیں لیکن جس طرح روزانہ کی بنیاد پر مسلمانوں اور انسانیت کے خلاف ہونے والے جرائم کی مالی امداد کے ساتھ ساتھ اِن کی حمایت و تائید کا سلسلہ امریکا نے جاری رکھا ہوا ہے، وہ قابل نفرت ہے۔

اس بیان میں سعودی شہری نے امریکی کی مذمت اس لیے بھی کی کہ وہ اسرائیل کی حمایت کرنے کا سلسلہ بھی جاری رکھے ہوئے ہے۔ اس بیان میں شمرانی نے دہشت گرد تنظیم القاعدہ کے ہلاک کر دیے گئے لیڈر اسامہ بن لادن کے کسی بیان کا بھی حوالہ دیا۔


ای پیپر