مسئلہ کشمیر :قومی سلامتی کے اہم اجلاس میں بڑے فیصلے
07 اگست 2019 (20:01) 2019-08-07

اسلام آباد : مسئلہ کشمیر کو لے کر پاک بھارت حالیہ کشیدگی میںاضافے کے بعد پاکستان کی قومی سلامتی کا اہم اجلاس ہو ا ،جس میں مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں لے جانے، بھارت کے ساتھ سفارتی تعلقات محدود اور تجارتی تعلقات معطل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔فیصلے کے فوراََ بعدبھارتی ہائی کمشنر اجے بساریہ کو پاکستان چھوڑنے کا حکم دے دیا گیا ۔

قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہوا جس میں مقبوضہ کشمیر کی موجودہ صورتحال غور کیا گیا،اجلاس میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر داخلہ اعجاز شاہ، وزیر دفاع پرویز خٹک سمیت مسلح افواج کے سربراہان، ڈی جی آئی ایس آئی، ڈی جی ایم او اور دیگر حکام شریک ہوئے۔

دوسری طرف پاکستان نے بھارت میں تعینات اپنے ہائی کمشنر کو بھی واپس بلانے کا فیصلہ کیا ہے۔

قومی سلامتی کے اس اہم اجلاس میں 5اہم فیصلے کیے گئے ۔

1۔ بھارت کے ساتھ سفارتی تعلقات محدود کرنے کا فیصلہ

2۔ بھارت کے ساتھ دوطرفہ تجارت معطل کی جائے۔

3۔ دوطرفہ معاہدوں کا جائزہ لینے کا فیصلہ

4۔ مقبوضہ کشمیر کا معاملہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اٹھانے کا فیصلہ

5۔ 14 اگست کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے طور پر منانے اور 15 اگست کو یوم سیاہ کے طور پر منانے کا فیصلہ


ای پیپر