بھارت نے امریکی خلائی ادارے 'ناسا' کے موقف کو مسترد کردیاہے
07 اپریل 2019 (17:28) 2019-04-07

نئی دہلی:بھارت نے سیٹلائٹ شکن میزائل کے تجربے سے خلائی ملبے میں اضافے سے متعلق امریکی خلائی ادارے 'ناسا' کے موقف کو مسترد کردیاہے۔

بھارتی ادارے ڈیفنس ریسرچ اینڈ ڈیولپمنٹ آرگنائزیشن کے سربراہ جی ساتھیش ریڈی نے کہا ہے کہ سیٹلائٹ شکن تجربہ اس حکمت عملی کے تحت کیا گیا کہ خلائی ملبہ بہت جلد تحلیل ہوجائے۔خیال رہے کہ چند روز قبل بھارت نے اپنے خلائی دفاع کو مضبوط بنانے کے لیے 186 میل دور موجود اپنے ہی سیٹلائٹ کو ملک میں تیار کردہ سیٹلائٹ شکن میزائل سے تباہ کرنے کا تجربہ کرنے کا دعوی کیا تھا۔

جس کے بعد ناسا کے انتظامی سربراہ جم برائڈنسٹائن نے سیٹلائٹ شکن میزائل کے تجربے کو خوفناک قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ اس سے نہ صرف خلائی ملبے میں اضافہ ہوا، بلکہ یہ بین الاقوامی خلائی اسٹیشن (آئی ایس ایس) کے لیے بھی خطرہ بن گیا ہے۔بھارتی ادارے کے سربراہ نے دعوی کیا کہ سیٹلائٹ شکن تجربے کے 10 روز تک خطرہ تھا، تاہم اب وہ مدت گزر چکی ہے۔


ای پیپر