نقیب اﷲ قتل کیس میں اہم موڑ ،راﺅانوار نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا
07 اپریل 2018 (20:17)

کراچی: نقیب اللہ قتل کیس کے سلسلے میں بنائی گئی جے آئی ٹی کا اجلاس ہوا،سابق ایس ایس پی رائو انوار جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے اور سارا ملبہ اپنی ٹیم کے 5 اہلکاروں پر ڈال دیا ۔تفصیلات کے مطابق ہفتے کو نقیب اللہ قتل کیس کے سلسلے میں بنائی گئی جے آئی ٹی کا اجلاس ہوا، جس میں سابق ایس ایس پی ملیر بھی موجود تھے۔ رائوانوار نے اپنا بیان ریکارڈ کرایا۔

ذرائع کے مطابق بیان میں انہوں نے کہا کہ سہراب گوٹھ چوکی انچارج اکبر ملاح سمیت میری ٹیم کے 5 اہلکار نقیب اللہ معاملے میں ملوث ہیں۔ سندھ پولیس کے کچھ افسران میرے خلاف سازش کر رہے ہیں۔جے آئی ٹی ٹیم نے سہراب گوٹھ میں واقع ہوٹل کا دورہ کیا اور ملازمین سے پوچھ گچھ کی۔ ملازمین نے بیان دیا کہ چوکی انچارج اکبر ملاح چند اہلکاروں کے ساتھ گاڑی میں آیا تھا، یہ اہلکار نقیب اللہ کو اپنے ساتھ گاڑی میں لے گئے، راو¿انوار ان کے ساتھ نہیں تھا۔ جے آئی ٹی کے ارکان شاہ لطیف کا بھی دورہ کریں گے۔


ای پیپر