جواب عرض ہے !
07 اپریل 2018 2018-04-07

٭ بیٹی کے ساتھ مل کر پاکستان کی تقدیر بدل دوں گا۔ ( سابق وزیر اعظم نواز شریف)
o جیسے بیٹوں کے ساتھ مل کر اپنی تقدیر بدل لی ؟؟؟
٭ نواز شریف کو پھر سے جیل بھیجنے کی تیاریاں ہو رہی ہیں۔ (وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق )
oلہٰذا عوام نے مٹھائیوں کے آرڈر دینے ہیں تو ابھی سے دے لیں !
٭ ہم نے اِس ملک سے اندھیرے ختم کر دیئے ہیں۔ ( وفاقی وزیر مملکت بجلی و پانی عابد شیر علی )
oتا کہ عوام کو ہماری کرپشن صاف دِکھائی دے!
٭ نواز شریف کا ساتھ دینے سے صِرف اللہ ہی روک سکتا ہے ۔ (نہال ہاشمی)
oاورمجھے یہ پریشانی لاحق ہے کہ اللہ مجھے روک کیوں نہیں رہا!
٭ نیب سب سے کرپٹ ادارہ ہے۔ ( دانیال عزیز وفاقی وزیر )
oحالانکہ میں اِس کا سربراہ نہیں ہوں!
٭ ماڈل ٹاﺅن کے شہیدوں کے لہو کا سودا نہیں کروں گا۔ ( مولانا طاہر القادری )
oکیونکہ فی الحال مجھے اِس کی مناسب قیمت نہیں مل رہی!
٭ عمران خان کو لیڈر نہیں مانتا (مولانا فضل الرحمن )
oکیونکہ اُس کے پاس ڈیزل کے کوئی ذخائر نہیں ہیں!
٭ اِس ملک کو تباہی سے صِرف مسلم لیگ نون ہی بچا سکتی ہے ( سید مشاہد حسین )
oجبکہ چند برس قبل اِس ملک کو تباہی سے صِرف جنرل مشرف بچا سکتا تھا!
٭ زرداری پیسے سے سب کچھ خرید سکتا ہے۔ ( وفاقی وزیر مملکت طلال چودھری )
oمیں حیران ہوں کہ مجھ پر اُس کی نظر کیوں نہیں پڑ رہی؟!
٭ بہت جلد قوم کے ہاتھ عمران خان کے گریبان پر ہوں گے۔ (اسفند یار ولی )
oحالانکہ ہونے ہمارے گریبان پر چاہئیں!
٭ پیپلز پارٹی کا مکروہ چہرہ سامنے آگیا ہے۔ راہنما پی ٹی آئی شاہ محمود قریشی )
oآپ نے کہیں شیشہ تو نہیں دیکھ لیا؟
٭ سیاست سیکھنے کے لئے نواز شریف کو زرداری کی شاگردی کرنی چاہئے ( قمر الزمان کائرہ )
oاور کرپشن سیکھنے کے لئے زرداری کو نواز شریف کی شاگردی کرنی چاہئے!
٭ آئندہ انتخابات میں پہلے سے زیادہ اکثریت حاصل کریں گے۔ (حمزہ شہباز شریف )
oاِس مقصد کے لیے ہم نے قیمے والے نانوں کے آرڈر ابھی سے دے دیئے ہیں!
٭ عوام کے ووٹوں پر کسی کو ڈاکہ نہیں ڈالنے دیں گے۔ ( سابق وزیر اعظم نواز شریف )
oالبتہ عوام کے نوٹوں پر ڈاکہ ڈالنے کےلئے میں ہوں ناں!
٭ زرداری اور نیازی کے پلے کچھ نہیں۔ اِن کو دفن کر دیں گے۔ ( وزیر اعلیٰ شہباز شریف)
oبالکل صحیح فرمایا ” گورکَنِ اعلیٰ “ صاحب آپ نے !
٭ سیاست میں رواداری کو مقدم رکھنا چاہئے۔ ( سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی)
oجبکہ ہم نے سیاست میں صِرف کرپشن کو مقدم رکھا!
٭ میں نے اپنے منہ پر سیاہی پھینکنے والے کو معاف کر دیا ہے ۔ ( وفاقی وزیر خواجہ محمد آصف )
oکتنے میں معاف کیا ہے ؟؟؟!
٭ پنجاب میں نون لیگ کو ہرانا مشکل کام ہے۔ ( وزیر اعلیٰ کے پی کے پرویز خٹک)
oجبکہ کے پی کے میں مجھے آسانی سے ہرایا جاسکتا ہے!
٭ نیب گدھے گھوڑوں کو ایک لاٹھی سے نہ ہانکے۔ ( وزیر اعلیٰ شہباز شریف )
oکیونکہ اِس سے ہم کو بڑی تکلیف ہوتی ہے!
٭ عمران خان کے پی کے میں عوام کا پیسہ ہڑپ کر رہا ہے ۔ ( راہنما مسلم لیگ امیر مقام)
oاور ہمیں تکلیف یہ ہے ہمارے ہوتے ہوئے یہ کام وہ کیسے کر سکتا ہے؟ !
٭ عمران خان کو سوائے جھوٹ بولنے کے کچھ نہیں آتا۔ ( مریم اورنگ زیب وزیر اطلاعات)
oاور مجھے سوائے کرپٹ لوگوں کی جناب میں بیٹھنے کے کچھ نہیں آتا!
٭ مرنے کے بعد اپنے اعضاءعطیہ کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ ( اداکارہ میرا)
oکون کون سے اعضاء، آنکھیں ، دل ؟؟؟!
٭ کچھ فیصلے تاریخ قبول نہیں کرتی۔ ( وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی )
oمجھے شک ہے مجھے وزیر اعظم بنانے کا فیصلہ بھی تاریخ قبول نہیں کرے گی!
٭ نون لیگ کو گھر کی لونڈی بنا کر رکھ دیا گیا ہے۔
( چوہدری نثار علی خان )
oجبکہ میں چاہتا تھا غلام بنا کر رکھا جائے!
٭ زبان کا استعمال ہمیشہ سوچ سمجھ کر کرنا چاہئے
( کشمالہ طارق )
oاور زبان کا استعمال کروانا بھی ہمیشہ سوچ سمجھ کر چاہیے!
٭ نواز شریف کے راستے میں رکاوٹیں کھڑی کی جا رہی ہیں۔ ( مخدوم جاوید ہاشمی)
oتو آپ کیا چاہتے ہیں نواز شریف کے راستے میں کیا کھڑا کیا جائے؟!
٭ چیف جسٹس کو چاہئے حکومت خود سنبھال لیں ۔ ( سابق وزیر اعظم نواز شریف )
oاور اُس کے بدلے میں چیف جسٹس ہمیں دے دیں، تا کہ ہم اپنے سارے کیسوں کے فیصلے اپنے حق میں کر لیں!
٭ جمہوریت کی گاڑی کو چلنے نہیں دیا جا رہا۔ (مولانا فضل الرحمن )
oآپ اپنا ڈیزل ڈال کر دیکھ لیں۔ شاید چل جائے!
٭ ہم بھاگنے والوں میں سے نہیں ( مریم نواز شریف )
oکِسی کو یقین نہ آئے تو کیپٹن صفدر سے پوچھ لے !
٭ مجبوری میں مداخلت کرتا ہوں۔ ( چیف جسٹس ثاقب نثار)
oاور دعا کرتا ہوں اللہ اِن مجبوریوں میں برکت عطا فرمائے!
٭ شریف برادران سے بڑا جھوٹا کوئی نہیںہے ۔ ( شیخ رشید احمد)
oحتٰی کہ میں خود بھی نہیں ہوں!
٭ عمران خان کو سیاست کی الف ب بھی نہیں آتی۔ ( وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ )
oآتی ہوتی تو وہ بھی ہماری طرح کرپٹ ہوتا !
٭ مارشل لاءنہ روک سکا تو گھر چلے جاﺅں گا۔ ( چیف جسٹس ثاقب نثار)
oجو ویسے بھی کچھ عرصے بعد میں نے چلے ہی جانا ہے!
٭ نوا زشریف نے مجھے آج تک کوئی ہدایت نہیں دی۔ ( وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی)
oیہ جھوٹ وغیرہ تو میں اپنی مرضی سے بولتا ہوں!


ای پیپر