سوتیلی ماں ٗ والد عابد علی کی میت لے گئی ہیں: بیٹی راحمہ
06 ستمبر 2019 (16:44) 2019-09-06

کراچی : پاکستان کے لیجنڈ اداکار عابد علی جو گزشتہ روز علالت کے باعث انتقال کرگئے تھے کی بیٹی راحمہ علی نے اپنی سوتیلی والدہ پر الزام لگایا ہے کہ وہ ان کے والد کی میت بغیر کسی کو بتائے اپنے ساتھ لے گئیں ۔

تفصیلات کے مطابق عابد علی کے انتقال کے بعد ان کے اہلخانہ کے درمیان گھریلو اختلافات سامنے آئے ہیں۔ عابد علی کی چھوٹی بیٹی راحمہ علی نے ایک ویڈیو پیغام جاری کیا ہے جس میں وہ روتے ہوئے بتارہی ہیں کہ وہ ان کی والدہ، ان کی بہنیں اور ان کے دیگر رشتے دار اسپتال میں موجود ہیں لیکن انہیں یہاں آکر پتہ چلا کہ ان کے والد کی دوسری بیوی اوران کی سوتیلی والدہ رابعہ نورین ان کے والد کی میت بغیر کسی کو بتائے لے گئیں ۔

راحمہ نے کہا کہ ہم سب یہاں پریشانی میں بیٹھے ہوئے ہیں کیونکہ ہمیں نہیں معلوم کہ ہم کہاں جائیں، ہمیں یہ بھی نہیں پتہ کہ رابعہ نورین والد کی میت کہاں لے کرگئی ہیں۔ رابعہ نورین نے ہماری پھپھوکوکہا ہے کہ ہم ان کے گھر نہیں جا سکتے۔ یہاں تک کہ انہوں نے ہمیں جنازے کے بارے میں بھی اطلاع نہیں دی کہ جنازہ کب ہوگا اورکہاں ہوگا، ہمیں نہیں معلوم اس صورتحال میں ہم کیا کریں۔

بعد ازاں راحمہ نے یہ ویڈیو ڈیلیٹ کرتے ہوئے وجہ بتائی کہ کچھ لوگ اس پوسٹ پر نازیبا تبصرے کررہے تھے جس کی وجہ سے ہم نے عارضی طور پر یہ پوسٹ ہٹادی ہے۔ واضح رہے کہ عابد علی نے دو شادیاں کی تھیں۔ ان کی پہلی بیوی کا نام حمیرا علی ہے جس سے ان کی تین بیٹیاں ایمان، راحمہ اورمریم علی ہیں۔ جب کہ عابد علی نے اداکارہ رابعہ نورین سے 2006 میں دوسری شادی کی تھی۔


ای پیپر