بلاول بھٹو نے آئی ایم ایف کے ملازمین کی تعیناتیوں کیخلاف مہم کا آغاز کر دیا
06 May 2019 (21:33) 2019-05-06

اسلام آباد:پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے گورنر سٹیٹ بینک کی تبدیلی کیخلاف بھرپور مہم چلانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملکی معاشی خودمختاری پر سمجھوتہ کیا جا رہا ہے۔  صرف پاکستان کو ہی نہیں آئی ایم ایف کو بھی پاکستان کی ضرورت ہے۔

پارلیمنٹ ہائوس میں اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ وزیر خزانہ، چیئرمین ایف بی آر اور گورنر اسٹیٹ بینک کی اچانک تبدیلیاں سنگین مسئلہ ہے، حکومت میں قائدانہ صلاحیت نہیں ہے، لگ رہا ہے ہم معاشی خودمختاری پر سمجھوتا کررہے ہیں، اب آئی ایم ایف ہمارے وزیر خزانہ چیئرمین ایف بی آر اور گورنر اسٹیٹ بینک کو تعینات کرے گا؟ آئی ایم ایف اگر ملک چلائے گا تو وہ عوام نہیں بلکہ اپنے مفاد کے لئے چلائے گا، اس طرح کا نظام نہیں چلے گا۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ جب ہمیں حکومت ملی تو پرویز مشرف خزانہ خالی کر چکا تھا۔ اس کے بعد پیپلزپارٹی آئی ایم ایف کے پاس گئی تو ہم نے عوام کی لڑائی لڑی۔ 68لاکھ نوکریاں عوام کو فراہم کیں۔ آئی ایم ایف سے ڈیل کے باوجود پیپلزپارٹی نے پنشن میں اضافہ کیا، سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں بھی اضافہ کیا، بینظیر انکم سپورٹ پروگرام جیسا فلاحی پروگرام شروع کیا مگر پی ٹی آئی حکومت آئی ایم ایف کی ہر بات کو مان رہی ہے۔


ای پیپر