صدارتی نظام سے متعلق وزیر اعظم عمران خان نے دوٹوک اعلان کر دیا
06 May 2019 (17:50) 2019-05-06

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اٹھارہویں ترمیم کی وجہ سے وفاق دیوالیہ ہو چکا ہے،جب تک شہر اپنا پیسہ اکٹھا نہیں کرینگے بہتری نہیں آ سکے گی، گورننس کی بہتری اولین ترجیح ہے، ہمیں نہیں پتا صدارتی نظام کی باتیں کہاں سے آ رہی ہیں، شہروں میں میئر کا الیکشن براہ راست کرائیں گے۔

میئر الیکشن کے بعد اپنی کابینہ لے کر آئے گا،پہلی دفعہ اختیارات نچلی سطح پر منتقل ہوں گے، پنجاب میں پنچایت کے براہ راست انتخاب ہوں گے، پرانے نظام کی وجہ سے مقامی سطح پر بہت زیادہ کرپشن ہوتی تھی،پنجاب کی 22ہزار پنچائیت کو 40ارب کے فنڈز ملیں گے،کوئی بھی اداروں کوایک دم ٹھیک نہیں کر سکتا، پہلا سال مشکل ہی گزرنا تھا۔پیر کووزیراعظم عمران خان نے صحافیوں سے گفتگو کی۔وزیراعظم نے پنجاب اور خیبرپختونخوا میں بلدیاتی نظام کے حوالے سے بریفنگ دی۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ نیا بلدیاتی نظام پوری دنیا کے نظام کے مطالعے کے بعد تیار کیا ہے، نئے بلدیاتی نظام کے تحت ویلج کونسل کے سربراہ راست انتخابات ہوں گے، پنجاب میں پنچائیت کے براہ راست انتخابات ہوں گے، خیبرپختونخوا میں ویلج کونسل کے سربراہ راست انتخابات کرائے، اس نظام کے تحت فنڈز براہ راست گاﺅں کو جاتے ہیں.

گزشتہ نظام کے تحت ضلع ناظم بلاواسطہ انتخابات سے منتخب ہونا تھا، پرانے نظام کی وجہ سے مقامی سطح پر بہت زیادہ کرپشن ہوتی تھی،پرانے نظام کے تحت یونین کونسل کے ارکان ضلع ناظم کو بلیک میل کرتے تھے، نئے نظام کے تحت دو سطحوں پر انتخاب ہو گا، پنجاب میں 22ہزار پنچائیت کا انتخاب ہو گا، نئے نظام کے تحت گاﺅں کی سطح پر براہ راست فنڈز جائیں گے،پنجابکی 22ہزار پنچائیت کو 40ارب کے فنڈز ملیں گے،دوسری سطح پر انتخاب تحصیل کی سطح پر ہو گا، تحصیل ناظم کا انتخاب براہ راست الیکشن کے ذریعے ہو گا، نئے نظام میں یونین کونسل کا نظام ختم کر دیا ہے.

بڑے شہروں کے میئر کا انتخاب براہ راست ہو گا جو اپنی کابینہ لا سکے گا، پرانے نظام میں فنڈز لوگوں کی بجائے عدم اعتماد سے بچنے پر خچ ہو جاتے تھے، نئے نظام میں تمام فنڈز عوام پر خرچ ہوں گے، بوسیدہ نظام کی وجہ سے شہر کھنڈرات بنتے جارہے ہیں، شہروں میں توسیع سے انتظامی مسائل پیدا ہوں گے، عمران خان نے کہا کہ شہر اپنے محصولات خود اکٹھے کریں گے، کراچی سال میں صرف 121ملین ڈالر اکٹھے کرتا ہے جبکہ لاہور سالانہ 32ملین ڈالر کی محصولات اکٹھی کرتا ہے، پابندیوں کے باوجود تہران میں سالانہ 500ملین ڈالر کے محصولات اکٹھے ہوتے ہیں۔

ممبئی سالانہ ایک ارب ڈالر کے محصولات اکٹھی کرتا ہے، پہلی مرتبہ حکومت اپنے اختیارات نچلی سطح پر منتقل کررہی ہے، پنجاب کے ترقیاتی فنڈز کا 30فیصد بلدیات کو دیں گے، سمجھ نہیں آ رہی کہ صدارتی نظام کے حوالے سے بات کہاں سے آرہی ہے، صدارتی نظام کی بات ہماری طرف سے نہیں آئی، صدارتی نظام کےلئے سب سے پہلے پارلیمنٹ کو متحد ہونا ہو گا، شبر زیدی کو ایف بی آر کا نیام چیئرمین مقرر کیا گیا ہے، 18ویں ترمیم کی وجہ سے وفاق دیوالیہ ہو گیا،اٹھارہویں ترمیم کے تحت صوبے ٹیکس جمع کرنے میں ناکام رہے ہیں، سوئٹزرلینڈ کی آبادی 50لاکھ کے قریب ہے اور ان کے 25صوبے بنیں، ضلع جتنا بڑا ہو گا اس کا انتظام چلانا اتنا ہی مشکل ہو گا، پاکستان میں پیسے کی کمی نہیں ہے، ہم تبدیلیاں لا رہے ہیں، پاکستان میں 8ٹریلین روپیہ اکٹھا کرنا مشکل نہیں ہو گا، مافیا کوشش کرتا ہے کہ تبدیلی نہ آئے، پہلے ہی کہا تھا کہ پہلا مرحلہ مشکل سے گزرے گا، ایم این ایز اور ایم بی ایز کو ترقیاتی فنڈز نہیں ملنا چاہئیں، نئے بلدیاتی نظام پر مزاحمت کا سامنا کرنا پڑے گا۔


ای پیپر