وزیراعظم آج قومی اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ لیں گے
سورس:   فائل فوٹو
06 مارچ 2021 (00:28) 2021-03-06

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان آج قومی اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ لیں گے اور 342 کے ایوان میں کامیابی کیلئے 172 ووٹ درکار ہوں گے۔ حکومتی اتحاد کے 180 جبکہ اپوزیشن جماعتوں کے 160 ارکان ہیں ۔

اس حوالے سے قومی اسمبلی کا اجلاس ہفتے کو دن سوا 12 بجے طلب کیا گیا ہے اور اجلاس کا ایجنڈا بھی جاری کردیا گیا ہے۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی وزیراعظم پر اعتماد کے حوالے سے قرارداد پیش کریں گے۔ اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ ؤنے اس اجلاس کے بائیکاٹ کا اعلان کردیا ہے۔

ایوان کی کارروائی شروع ہونے پراسپیکر قومی اسمبلی 5 منٹ تک ایوان میں گھنٹیاں بجا کر ارکان کی حاضری یقینی بنائیں گے اس کے بعد ایوان کے تمام دروازے بند کر دیے جائیں گے تاکہ کوئی رکن باہر جا سکے نہ کوئی باہر سے اندر آئے ۔

اسپیکر وزیراعظم پر اعتماد کی قرارداد پڑھنے کے بعد ارکان سے کہیں گے کہ اس کے حق میں ووٹ ڈالنے کے خواہش مند شمار کنندگان کے پاس ووٹ درج کروا دیں۔

شمار کنندگان فہرست میں رکن کے نمبر کے سامنے نشان لگاکراس کانام پکاریں گے۔ ووٹ درج ہونے کے بعد ارکان ہال کی لابیز میں انتظار کریں گے۔ تمام ارکان کا ووٹ درج ہونے کے بعد اسپیکر رائے دہی مکمل ہونے کا اعلان کریں گے۔

سیکرٹری اسمبلی ووٹوں کی گنتی کر کے نتیجہ اسپیکر کے حوالے کر دیں گے۔ اسپیکر دوبارہ دو منٹ کے لیے گھنٹیاں بجائیں گے تاکہ لابیز میں موجود ارکان قومی اسمبلی ہال میں واپس آ جائیں اور پھر اسپیکر قومی اسمبلی نتیجے کا اعلان کر دیں گے۔

وزیراعظم پر اعتماد کی قرارداد منظور یا مسترد ہونے کے بارے میں صدر مملکت کو تحریری طور پر بھی آگاہ کیا جائے گا۔


ای پیپر