والدین کا 18 ماہ کے بچے کیساتھ انسانیت سوز ظلم
06 جون 2020 (17:24) 2020-06-06

لوزیایا:امریکا میں والدین نے اپنے ہی بچے کے ساتھ انسانیت سوز سلوک کر کے اسے اسپتال پہنچا دیا، پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے انھیں گرفتار کر لیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکی ریاست لوزیانا میں میاں بیوی نے اپنے 18 ماہ کے بچے کا جسم سگریٹ سے داغ دیا اور ایک ہاتھ گولی مار کر زخمی کر دیا، جس پر اسے اسپتال پہنچانا پڑا۔شریوپورٹ پولیس نے 26 سالہ کیمبریا لیوس اور اس کے شوہر 40 سالہ آرتھر واٹکنز کو گرفتار کر لیا۔ پولیس کا کہنا تھا کہ انھیں ایسٹ ہرنڈن اسٹریٹ پر گولی چلنے کی رپورٹ ملی تھی، جب وہ وہاں پہنچے تو خون کے علاوہ وہاں کوئی نہیں تھا۔

بعد ازاں پولیس کو اطلاع ملی کہ ولز نائٹن میڈیکل سینٹر میں ایک ننھا بچہ ہاتھ میں گولی کے زخم کے ساتھ لایا گیا ہے، معلوم ہوا کہ بچے کو اس کی ماں اسپتال چھوڑ کر چلی گئی تھی۔پولیس رپورٹ کے مطابق بچے کے ہاتھ پر گولی کے زخم کے علاوہ جسم پر سگریٹ داغنے کے متعدد نشان بھی پائے گئے، اسپتال کے عملے کا کہنا تھا کہ بچے کو کئی دنوں سے نہلایا بھی نہیں گیا تھا اور اسے اس کے سائز سے تین گناہ چھوٹا ڈائپر پہنایا گیا تھا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ بچے کا باپ واٹکنز بھاگ گیا تھا، تاہم پولیس نے اس کی گاڑی ٹریک کی اور اسے پکڑ کر حراست میں لے لیا، پولیس نے بچے کی ماں کیمبریا لیوس کو بھی گرفتار کر کے اس کے خلاف ننھے بچے پر سیکنڈ ڈگری تشدد کے الزام میں مقدمہ درج کر دیا، واٹکنز پر فرار ہونے کا اضافی الزام بھی لگایا گیا۔


ای پیپر