وزیر اعظم کے بھانجے کو انصاف مل گیا
06 جنوری 2020 (22:55) 2020-01-06

لاہور:لاہور پولیس کی خصوصی ٹیموں نے ڈکیتی قتل سمیت دو اہم وارداتوں میں ملوث 6 ڈاکوﺅں کو گرفتار کرکے لوٹا گیا مال برآمد کرلیا ہے۔ اس ضمن میں پولیس لائنز قلعہ گجر سنگھ میں پریس کانفرنس کے دوران سی سی پی او لاہور ذوالفقار حمید نے بتایا کہ زمان پارک کے علاقے میں واردات کرنے والے 3 ڈاکوﺅں کو 24 گھنٹے کے اندر گرفتار کرکے مال مسروقہ برآمد کرلیا گیا۔ 4 جنوری کو وزیراعظم پاکستان کے بھانجے شیر شاہ خان کے گھر205 اپر مال میں رات03 بجے ڈکیتی کی واردات کی گئی۔ واردات میں 3 ڈاکوو¿ں نے گن پوائنٹ پر اہل خانہ کو یرغمال بنا کر تقریباً 12لاکھ روپے کی واردات کی۔ 3 ڈاکو محمود احمد، کاظم عرف کاکا اور فہد اہلخانہ سے نقدی، طلائی زیورات، موبائل فونز اور نوادرات میں شامل پستول چھین کر فرا ر ہوگئے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ واردات میں ملوث ملزموں کی گرفتاری کے لئے 3 پولیس ٹیمیں تشکیل دی گئیں۔ سی سی ٹی وی کیمروں سمیت جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے ملزموں کو گرفتار کر لیا گیا۔ مناواں کے رہائشی 2 ملزم محمود احمد اور کاظم عرف کاکا سگے بھائی ہیں کو گرفتار کر کے 100 فیصد مال مسروقہ برآمد کرلیا گیا۔ ملزموں نے اپنے تیسرے ساتھی فہد کا انکشاف کیا جو شیر شاہ خان کے گھر کے نزدیک رہتا تھا کو بھی گرفتارکر لیا گیا ہے۔ ذوالفقارحمید نے دوسری واردات کے بارے میں بتایا کہ کوٹ لکھپت کے علاقے میں 2 جنوری کو 3 ڈاکو صبح 4 بجے کچا جیل روڈ پر ایس15میں ایک ملٹی نیشنل کمپنی کے دفتر میں دوران ڈکیتی سکیورٹی گارڈ انعام گل کو قتل کر کے فرار ہو گئے۔ ملزموں حماد عرف شیر خان، حیدر عرف پنیا اور راشد علی نے سکیورٹی گارڈ انعام گل کو گلے پر چھریوں کے وار کرکے قتل کر دیا تھا۔ ڈاکو واردات میں ملٹی نیشنل کمپنی کی گاڑی، نقدی اور موبائل فونزلے فرار ہو گئے تھے جس کا مقدمہ تھانہ کوٹ لکھپت میں عبدالوحید کی مدعیت میں درج ہوا ۔ یہ تینوں ملزم بھی پولیس نے پکڑ کر مال برآمد کر لیا ہے۔ سی سی پی او نے بتایا کہ ڈی آئی جی انویسٹی گیشن ڈاکٹر انعام وحید خان کی سربراہی میں ایس پی کینٹ انویسٹی گیشن، ایس پی سی آئی اے اور ڈی ایس پی ڈیفنس نے اپنی ٹیموں کے ساتھ دن رات کام کرکے دونوں وارداتوں میں ملوث تمام6 ملزموںکو گرفتارکرلیا۔ سی سی پی او لاہور نے ملزموں کی گرفتاری پر متعلقہ پولیس ٹیموں کے لئے نقد انعامات اور تعریفی اسنادکا اعلان کیا۔ مختلف سوالات کا جواب دیتے ہوئے سربراہ لاہور پولیس نے کہا کہ مقدمات کی تفتیش کی لاگت میں اضافے کے لئے پنجاب حکومت اور آئی جی پولیس سے درخواست کی گئی ہے۔ امید ہے کہ آئندہ بجٹ میں اضافی فنڈز مل جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی کے تناظر میں لاہور میں امریکی اور ایرانی تنصیبات کی سکیورٹی بڑھا دی گئی ہے۔ پریس کانفرنس میں ڈی آئی جیز رائے بابر سعید، انعام وحید، سی ٹی او کیپٹن (ر) ملک لیاقت، ایس ایس پی انویسٹی گیشن ذیشان اصغر اور ایس پی سی آئی اے عاصم افتخار نے بھی شرکت کی۔


ای پیپر