غیر اخلاقی ویڈیوز کی قومی اسمبلی میں بازگشت
06 جنوری 2020 (21:06) 2020-01-06

اسلام آباد: قومی اسمبلی میں مسلم لیگ (ن) کے خواجہ آصف اور پی ٹی آئی کے فواد چوہدری میں لفظی گولہ باری سے ایوان مچھلی بازار بن گیا۔

قومی اسمبلی کے اجلاس میں لیگی رہنما خواجہ آصف اور وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری کی بحث سے ایوان مچھلی بن گیا، دونوں رہنماو¿ں میں متنازع ویڈیو کے معاملے پر بحث و مباحثہ ہوتا رہا اور دونوں ایک دوسرے پر لفظی گولہ باری کرتے رہے۔

مسلم لیگ (ن) کے خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ ہم اپنی عزت کی نیلامی پرخود تلے ہوئے ہیں، گلہ کسی سے نہیں ہمیں اپنےآپ سے کرنا چاہیے، یہاں ایوان میں جو ہوتا ہے ہم خود پگڑی اچھلواتے ہیں، ایک دوسرے کے خلاف قوانین سے پگڑی اچھالنے کا موقع ملتا ہے۔

خواجہ آصف نے کہا کہ پی ٹی آئی والے وہی کاٹ رہے ہیں جو انہوں نے بویا تھا، اپنے پاوَں جلے تو شور کیا، ہمارے پاوَں جلنے پر کسی کوخیال نہیں آیا، جب تک ایوان کی عزت کا خیال نہیں کریں گے پگڑیاں اچھالی جائیں گی، ہمیں اپنے آپ اور رویوں کو ٹھیک کرنا ہوگا، فوادچودھری خود اینکر رہے ہیں، ریکارڈ نکلوائیں کہ وہ کیا کہتے رہے، پچھلے دس سے 15 برس کے دوران کوئی بھی ان کی زبان سے محفوظ نہیں رہا، سیاسی فائدے کے لیے ہم بہت نیچے گرگئے ہیں۔


ای پیپر