چہرے پر میٹھا سوڈا لگانے والی خواتین کیلئے انتہائی تشویشنا ک خبر 
06 اگست 2020 (21:01) 2020-08-06

لاہور :طبی ماہرین کے مطابق میٹھا سوڈا دانوں، کیل مہاسوں، ایکنی کے لیے مفید ہے اس کے سائنسی طور پر کوئی شواہد نہیں ملتے ہیں، جلد کے حساس ہونے کے سبب سائنس اس بات کی تصدیق کرتی ہے کہ میٹھے سوڈے کے جلد پر استعمال سے یہ نقصان دہ ثابت ہو سکتا ہے ۔

انٹرنیٹ پر موجود چند بیوٹی انفلوئنسرز کا ماننا ہے کہ میٹھا سوڈا ایکنی کے خاتمے میں بھی کردار ادا کرتا ہے جسے دیکھنے کے بعد متعدد خواتین گھر میں رکھے میٹھے سوڈے کا اپنی جلد پر استعمال شروع کر دیتی ہیں جو کہ نہایت نہ مناسب ہے ۔

طبی ماہرین کے مطابق انسانی جلد کی فطرت ایسیڈک ہے جبکہ میٹھا سوڈا قدرتی طور پر الکلائن خصوصیات رکھتا ہے، میٹھے سوڈے کےجلد پر استعمال سے جلد کا پی ایچ لیول بگر سکتا ہے جس سے جلد صاف ہونے کےبجائے مزید خراب ہو سکتی ہے ،طبی ماہرین کے مطابق اگر ایکنی کے علاج کے غرض سے میٹھا سوڈا براہراست جلد پر لگا لیا جائے تو یہ بجائے ایکنی صاف کرنے کے جلد کو مزید خراب، داغدار اور  جلا سکتا ہے، اس کے استعمال سے ایکنی مزید موٹی بھی ہو سکتی ہے ۔

ماہرین جلدی امراض کا کہنا ہے کہ اگر کسی کے جلد پر ایکنی کی شکایت ہے تو اس کا علاج گھر میں موجود مصنوعات سے کرنے کے بجائے کسی معالج سے رابطہ کریں، انٹرنیٹ پر موجود ویڈیوز کی مدد سے جلد کا کسی صورت علاج نہ کریں، اگر آپ کی جلد حساس ہے تو چھوٹی سے چھوٹی اور آپکی نظر میں بے ضرر چیز بھی بڑا نقصان کر سکتی ہے ۔


ای پیپر