عمران خان نے نیب کو ریاستی دہشت گردی کیلئے استعمال کیا: مریم اورنگزیب
06 اپریل 2019 (17:22) 2019-04-06

لاہور: پاکستان مسلم لیگ (ن)کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ عمران خان اپنی نالائقی چھپانے کیلئے نیب کو ریاستی دہشتگردی کے لیے استعمال کررہے ہیں،لاہور ہائیکورٹ کی روشنی میں نیب حمزہ شہباز کو گرفتار نہیں کرسکتی، عمران خان جان بوجھ کر عوام کو بے وقوف بنانے کے لیے یہ سب کررہے ہیں، نیب اگر آزاد ہوتی تو اس کی ترجمانی وزیراعظم عمران خان ، فواد چوہدری اور شہباز گل نہیں کررہے ہوتے، حمزہ شہباز کے گارڈ نے کون سی دہشتگردی کی اور تشدد کیا یہ بھی میڈیا کو بتایا جائے۔

مریم اورنگزیب نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے  کہا کہ نیب کی طرف سے ریاستی دہشتگردی کی جارہی ہے، لاہور ہائیکورٹ کی روشنی میں نیب حمزہ شہباز کو گرفتار نہیں کرسکتی، نیب لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے پر سپریم کورٹ گئی ہے لیکن عدالتِ عظمی نے اس پر کوئی فیصلہ نہیں دیا، سپریم کورٹ کے ایک فیصلے کو اپنی منشا کے مطابق استعمال نہیں کیا جاسکتا۔ عمران خان نے گزشتہ روز سرعام کہا کہ وہ ساری اپوزیشن کو جیلوں میں ڈالنے آئے ہیں، ان کی کارکردگی آج سب کے سامنے ہے، جان بوجھ کر اپنی نالائقی سے نظر ہٹانے کے لیے یہ سب کیا جارہا ہے، ملک میں کوئی قانون نہیں ہے، سب کو جیلوں میں ڈالنے کے لیے ریاستی دہشتگردی کی جارہی ہے۔

لیگی ترجمان نے کہا کہ عمران خان نیب کو ریاستی دہشتگردی کے لیے استعمال کررہے ہیں، پہلے کنٹینر پر چڑھ کر ریاست کو دھمکاتے رہے اور آج کرسی پر آکر اپوزیشن کو جیلوں میں ڈالنے کے لیے ریاست کو استعمال کررہے ہیں، عمران خان جان بوجھ کر عوام کو بے وقوف بنانے کے لیے یہ سب کررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ نیب اگر آزاد ہوتی تو اس کی ترجمانی وزیراعظم عمران خان ، فواد چوہدری اور شہباز گل نہیں کررہے ہوتے۔

مریم اورنگزیب نے مزید کہا کہ حمزہ شہباز کے گارڈ نے کون سی دہشتگردی کی اور تشدد کیا یہ بھی میڈیا کو بتایا جائے۔انہوں نے 9 اپریل کو نیب کی جانب سے پیشی کا نوٹس موصول ہونے کی بھی تردید کرتے ہوئے کہا کہ حمزہ شہبازاپنی بیمار بیٹی کو چھوڑ کر واپس آئے اور نیب کے سامنے پیش ہوئے، یہ اس شخص کے ساتھ ہوا جو ہر پیشی پر آیا اور تعاون کیا، اگر انکوائری کے دوران کسی کو گرفتار کرنا ہے تو وزیراعظم کو گرفتار کریں، نیب نے پیشیوں کے دوران حمزہ شہباز کے سامنے منی لانڈرنگ کے ثبوت کیوں نہیں رکھے۔


ای پیپر