فاٹا میں بلبلہ اٹھ رہا ہے، آنے والے دنوں میں صورتحال مزید سنگین ہو جائے گی،اسفندیار ولی خان
06 اپریل 2018 (20:26)

پشاور:عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے کہا ہے کہ ملک در حقیقت ایک سنگین بحران کی جانب بڑھ رہا ہے اور سیاسی جماعتوں کی آپس میں تلخیوں اور دھینگا مشتی کا منفی اثر قوم پر پڑ رہا ہے، فاٹا میں ایک بلبلہ اٹھ رہا ہے اگر صورتحال کی سنگینی کا احساس نہ کیا گیا تو آنے والے دنوں میں صورتحال مزید سنگین ہو جائے گی، ان خیالات کا اظہار انہوں نے چارسدہ میں رجڑ ون اور رجڑ ٹو کے ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری ایمل ولی خان اور دیگر رہنمائوں نے بھی اس موقع پر خطاب کیا ، اسفندیار ولی خان نے کہا کہ قوم کے مسائل کی طرف کسی نے کوئی توجہ نہیں دیتمام سیاسی جماعتیں اپنے مفادات کی خاطر آپس میں گتھم گتھا ہیں ، انہوں نے کہا کہ فاٹا کا مسئلہ طوریل عرصہ سے سرد خانے میں ہے اور حکومت اس میں دلچسپی سے کترا رہی ہے ، آپریشن کی صورت میں ہزاروں افراد بے گھر ہو گئے ، سکول اور گھر تباہ ہو گئے اور قبائلی عوام آئی ڈی پیز کی صورت میں کیمپوں میں پڑے ہیں ، دوسری جانب فاٹا میں غیر ضروری چیک پوسٹوں نے عوام کو ذہنی کرب میں مبتلا کر رکھا ہے لیکن کسی نے بھی ان تمام مسائل کو حل کرنے کی سنجیدہ کوشش نہیں کی ، اسفندیار ولی خان نے کہا کہ فاٹا کے حوالے سے سب سے پہلی اے پی سی اے این پی نے بلائی، ہم باچا خان بابا کے عدم تشدد کے فلسفے پر کاربند ہیں اورفاٹا کے عوام کے حقوق کی جنگ آئینی و جمہوری انداز میں لڑتے رہیں گے، انہوں نے واضح کیا کہ البتہ اس معاملے میں غیر ضروری تاخیر سے فاٹا میں حالات مزید سنگین ہو سکتے ہیں۔

سی پیک کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ موجودہ نقشے سے چائنہ پنجاب اکنامک کوریڈور کا تاثر مل رہا ہے کیونکہ پختونوں کا حصہ اس میں نہیں دیا جا رہا ،وفاقی حکومت نے پنجاب کو ہی پاکستان تصور کر لیا ہے، سینیٹ الیکشن میں ہونے والی ہارس ٹریڈنگ کا ذکر کرتے ہوئے اسفندیار ولی خان نے کہا کہ نواز شریف اور زرداری کو ایک سکے کے دو رخ کہنے والے نے سینیٹ الیکشن میں زرداری کو سپورت کیا اور کپتان کے ممبران نے دونوں جیبیں بھریں ،انہوں نے کہا کہ عمران خان کی جانب سے بکنے والوں پر فوجداری مقدمات کا اعلان کہاں گیا جبکہ تمام ضمیر فروشوں کی نشاندہی بھی ہو چکی ہے، انہوں نے کہا کہ زرداری کا اس بات پر شکر گزار ہوں کہ کرپشن کے خلاف ورد کرنے والے کو عوام کے سامنے بے نقاب کر دیا ،انہوں نے کہا کہ صبح شام کرپشن کے خاتمے کی باتیں کرنے والے کی اپنی جماعت کرپشن سے لبریز ہے، صوبائی حکومت کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ تاریخ میں پہلی بار صوبائی اسمبلی میں ایم پی ایز نے اپنے ہی وزیر اعلیٰ کو کرپٹ ثابت کر دیا ہر طرف سے اٹھنے والی آوازوں کے باوجود نیب خاموش ہے ۔

بلین سونامی ٹری اور حیات آباد میں باب پشاور فلائی اوور میں اربوں روپے کی کرپشن پر نیب کو حرکت میں آنا چاہئے ، انہوں نے کہا کہ موٹر وے سے اگر حیات آباد جائیں تو راستے میں 350کی بجائے تین ہزار ڈیم نظر آئیں گے ، انہوں نے کہا کہ شہباز شریف پر جنگلہ بس میں کرپشن کے الزمات لگانے والے بتائیں کہ اب پشاور میں جنگلہ بس میں کتنی کمیشن اور کرپشن ہوئی، اسفندیار ولی خان نے کہا کہ آئندہ الیکشن میں بڑے بڑے چہرے اپنے سیاسی لباس تبدیل کریں گے،انہوں نے کہا کہ اے این پی نے ہمیشہ قوم کی بقاءکیلئے قربانیاں دی ہیں اور آئندہ بھی الیکشن میں کامیابی کے بعد عوام کے حقوق کے تحفظ کیلئے میدان میں ہوگی۔


ای پیپر