'نواز شریف کی نازک اور غیرمستحکم صحت بھرپور علاج کی متقاضی ہے'
کیپشن:   فائل فوٹو
05 نومبر 2019 (14:20) 2019-11-05

لاہور: نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم کے پلیٹ لیٹس کی تعداد 30 ہزار کی قابل قبول حد سے نیچے آ چکی ہے، جس کے بعد انہیں خون پتلا کرنے والی ادویات دینا محفوظ نہیں۔

نواز شریف کی نازک اور غیرمستحکم صحت بھرپور علاج کی متقاضی ہے۔ ان کے پلیٹ لیٹس ایک مرتبہ پھر کم ہو رہے ہیں۔ اس کی وجوہات اور تشخیص اب تک نہیں ہوسکی۔

واضح رہے کہ پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف گزشتہ کئی روز سے

دوسری جانب پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے ٹوئٹر پیغام میں کہا ہے کہ سابق صدر زرداری کو اب تک طبی ماہرین اور ذاتی معالج تک رسائی نہیں دی گئی۔

ہماری فیملی کی سابق صدر کی صحت کو لے کر فکر بڑھتی جارہی ہے۔ اگر میرے والد صاحب کو کچھ ہوا تو موجودہ حکومت ذمہ دار ہوگی۔


ای پیپر